لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


ناچ بھی جانے، آنگن بھی سیدھا Share
……سید شہزاد عالم……
آج کل امریکی وزیر خارجہ ہلیر ی کلنٹن افریقہ کے سات ممالک کے دورے پر ہیں۔ ہلیری کلنٹن نے ملاوی کے دورے میں روایتی لباس پہن کررقص کیاجس میں سب ہی ان کے ساتھ جھوم اٹھے تھے۔پھر اس کے بعد جنوبی افریقہ میں بھی رقص کا شاندار مظاہرہ کیا اور عشائیے کی محفل میں موجود ہر کوئی ان کا ساتھ دینے پر مجبور ہوگیا۔ہیلری کلنٹن نے موسیقی کی دھن پرخوب جم کر ڈانس کیاجسے دیکھ کر عشائیے میں موجود دیگر لوگوں کو بھی جوش آیا اور وہ بھی امریکی وزیر خارجہ کا ساتھ دینے کے لیے میدان میں اتر آئے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں کہ ہلیری کلنٹن کو افریقہ کے دورے میں ایسی کون سی خوشیاں مل رہی ہیں کہ وہ ناچنے پرمجبور ہیں۔ اس قبل وہ بحیثیت سیکریٹری آف اسٹیٹ کئی ممالک کے کامیاب دورے کر چکی ہیں لیکن وہاں ان کو ناچتے نہیں دیکھا، ہاں البتہ موجودہ امریکی صدر اور ان کی خاتون اول نے جب بھارت کا دورہ کیا تو انہیں وہاں ڈانس کرتے ضرور دیکھا تھا۔ ہو سکتا ہے امریکہ کے خلائی مشن نے مریخ میں کوئی خزانہ دریافت کر لیا ہو جس کی خوشی چھپائے نہیں چھپ رہی ہو یا پھر سوڈان، تیونس، مصر، لیبیا کے بعد اب شام میں کوئی بڑی کامیابی نصیب ہونے والی ہو، جس کا پیشگی جشن منا رہی ہوں۔ ان ممالک میں امریکہ اپنے عالمی حریفوں کا پتہ کاٹ چکاہے اور سیاسی، فوجی اور اقتصادی پہلوؤں سے کامیابیاں حاصل کررہا ہے۔ یہ بھی تو ہو سکتا ہے کہ مڈل ایسٹ میں امریکی پلان کامیابی سے آگے بڑھ رہا ہو اور کئی حریف اب نئے حلیف بن کران کو میسر آگئے ہوں جو پرانے حلیفوں کا صفایا کرنے اور نئے حلیفوں کو بر سر اقتدار لانے میں ان کے مددگار بن رہے ہوں۔ہو سکتا ہے کہ انہیں اس بات کی بے حد خوشی ہو کہ اب کسی ملک کو سیدھا کر نے کے لئے امریکہ کو اپنی فوجیں نہیں بھیجنا پڑے گی بلکہ اس ملک میں کئی طرح کے باغی بکثرت مل جائیں گے جو ان سے مال لے کر خوب تن من دھن سے خدمات انجام دیں گے۔ بہر حال ان کی خوشی اور مستی بتا رہی ہے کہ امریکہ کا وقت اچھا چل رہا ہے۔ ہیلری کلنٹن ایک سپر پاور کی طاقتور ااہلکار ہیں۔ صرف امریکہ میں ہی نہیں بلکہ کئی ممالک کے سربراہوں کو بھی وہ انگلیوں پر نچاتی ہونگیں ، اور اب دنیا کو یہ بتانا چاہتی ہوں کہ جب وہ خود اتنا اچھا ناچ سکتی ہیں تو نچانے میں انہیں کتنی مہارت ہو گی۔ ان کی خوش قسمتی ہے کہ جہاں ان کو ناچ آتا ہے وہاں ان کو آنگن بھی سیدھا ہی ملتا ہے، البتہ دنیا میں ابھی کئی ممالک ایسے باقی ہیں جہاں کا آنگن ان کے لئے ابھی تک ٹیڑھا ہے اور ناچنا مشکل ہے۔
shahzad.janggroup@gmail.com  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 35 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


SYED YASIR HABIB , KARACHI..........G HAN HUM AISAY HI BOHRAN KA SHIKAAR RAHAIN GAY JB TAK HUM KHUD THEEK NAHIN HON GAY. HAMARAY BIGAAR MAIN KA BHI KIRDAAR HAI.
 
SYED YASIR HABIB Posted on: Saturday, August 18, 2012


سدھیر احمد، حیدرآباد…ممکن ہے وہ جانتی ہوں کہ برما میں کیا ہورہا ہے۔
 
sudheer ahmed Posted on: Friday, August 17, 2012


Muhammad Ayub Ghouri , Karachi........Egypt may ja kar nachay to baat hogi, bcoz wahan per puri islami governemt aa gai hay, jis may 150 k kareeb to hafiz hain or baki bhi aalim or qabil log hain,
 
muhammad Ayub ghouri Posted on: Monday, August 13, 2012


Najaf Ali Naqvi, Islamabad.........Shazad bhai aap ne sach kaha aur bohatt achha blog likha hy aap ne lakin tahgoot ki ya khoeshi kabi be puri ni ho ge syria kabi be dashgardon k hath ni jaye ga humen yaqeen hy basher al asad in sab ko is lye bura lagta hy kiyn k wo isreal k khalf hy lakin ab waqat aagaya hy jb palestine azad ho ga INSHALLAH.
 
najaf ali naqvi Posted on: Monday, August 13, 2012


سہیل خان، اسلام آباد…راشد صاحب نے اچھی بات کہی ہے کہ ہمیں اپنے تابناک ماضی سے نکل کر خوفناک حال میں آنا چاہیئے۔ افسوسناک بات ہے کہ ہم نہ کافر ہیں نہ مسلمان، بلکہ منافقین کی فہرست میں ہیں۔ہیلری کلنٹن آج اس لیئے ناچ رہی ہیں کہ ان کے آبا ان کے لیئے کچھ چھوڑ کر گئے ہیں۔ ہمیں تو ورثے میں جہالت اور فرقہ پرستی ہی ملی ہے۔ اللہ ہم پر رحم فرمائے۔
 
سہیل خان Posted on: Sunday, August 12, 2012


عاشق علی انصاری، سکھر…میر، ان نیم باز آنکھوں میں......ساری مستی شراب کی سی ہے۔
 
ashiq ali ansari Posted on: Sunday, August 12, 2012


محمد حسین، گجرات…شاید رقص ان کے کلچرکا حصہ ہے۔
 
Muhammad Hussain Posted on: Sunday, August 12, 2012


Amin Khan, Rawalpindi.............goray log hain nachtay rehtay hain inka kaam hi hay nachna gana.
 
amin khan Posted on: Sunday, August 12, 2012


Fayyaz Ali, Qatar...........slaam, arayy logo tumhara kia main janoo mera khuda jany.
 
fayyaz ali Posted on: Saturday, August 11, 2012


شاہد، امریکا…ڈانس کا ان کے دورے سے کوئی تعلق نہیں، وہ اگرامریکا میں ہوتیں تب بھی ڈانس کرتیں، خدا کیلئے جو برا نہ ہو اسے برا بنانا چھوڑ دو، جب تک کوئی ٹھوس ثبوت نہ ہو۔
 
shahid Posted on: Friday, August 10, 2012


Ikram, Karachi...........yeh koi nai baaat nahen.
 
ikram Posted on: Thursday, August 09, 2012


راشد چوہدری، امریکا…چین نے پچھلے چند عشروں میں افریقی ممالک کے ساتھ اقتصادی روابط قائم کر لئے تھے جو امریکہ کو گراں گذرتے تھے ممکن ہے ہیلری کلنٹن کوحالیہ دورے میں کوئی بڑی کامیابی نصیب ہوئی ہو جس کی خوشی میں وہ ڈانس کر رہی ہوں، ویسے بھی امریکی خوش رہنے والی قوم ہے، ہمیں بھی اپنے لئے خوشی کے مواقع تلاش کرنا چاہئیں، مسلم ممالک کو اپنے تابناک ماضی سے نکل کر اپنے خوفناک حال میں آنا ہوگا، حیرت کی بات ہے کہ اس ترقی یافتہ دور میں بھی مسلمان کس قدر پسماندہ ہیں۔
 
Rashid Chaudhry Posted on: Thursday, August 09, 2012


Sohail, Abbottabad..........aj hamara mulk buhran ka shekar q hai.
 
sohail Posted on: Thursday, August 09, 2012


Muhammad Ali, Lahore.......inn ka dance karna banta hae kueen kae kabhi kabhi khud b nach lena cha hiye jahan app puri dunya ko apney isharey pae nacha rahey hoo.
 
muhammad ali Posted on: Thursday, August 09, 2012


مبشر احسان، انڈیا…اچھا بلاگ تحریر کیا گیا ہے۔
 
Mobashshir Ehsan Posted on: Wednesday, August 08, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | Next
Page 2 of 3


غیبت
بڑھتے سفاکانہ واقعات، غربت کا شاخسانہ
کیا فوجی آپریشن ناگزیر ہے؟
خوشیوں کا گھر” انعام گھر“
پروفیسر صاحب! جائیے معاف کیا
 
پروفیسر صاحب! جائیے معاف کیا
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 75 )
بلاول کو دھمکی آمیز خط ،حقیقت کیا ہے؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 47 )
کم عمری کی شادی اور صحت کے مسائل
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 41 )
آزدی صحافت پر حملہ
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 21 )
خوشیوں کا گھر” انعام گھر“
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 19 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy