لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


لاؤ ہم خود ہی نشیمن کو جلا دیتے ہیں! Share
……سید شہزاد عالم……
پنجاب کے کئی شہروں میں بدترین لوڈ شیڈنگ کے باعث معمولات زندگی شدید متاثر ہیں۔ موسم گرما اپنے عروج پر ہے اور حکومت کی تمام تر کوتاہی، بدانتظامی ، عدم دلچسپی اور پر لے درجے کی نا اہلی کے باعث بجلی کا بحران اپنے عروج پر پہنچ گیا ہے جس کے باعث اب عوام شدید مایوسی اور اشتعال کے عالم میں سڑکوں پر حکومت کے خلاف مظاہرے کر رہے ہیں اور ملک میں رائج کلچر کے عین مطابق یہ مظاہرے پر تشدد صورت اختیار کر گئے ہیں۔ اب تک کئی قیمتی جانیں ان مظاہروں کے دوران جاں بحق ہو چکی ہیں اور کروڑوں روپے کی نجی اور سرکاری املاک نذر آتش ہو چکی ہیں۔
اس جمہوری دور میں ہم متعدد بار دیکھ چکے ہیں کہ جب بھی عوام اپنے مطالبات لئے سڑکوں پر آتی ہے مرکزی اور صوبائی حکومتیں فوراً ایک دوسرے کی مدد کو پہنچتی ہیں ۔۔ کس طرح؟۔۔۔۔ مرکز میں پی پی کی حکومت اور پنجاب میں ن لیگ کی حکومت ایک دوسرے کے خلاف بیان بازی شروع کر تے ہیں اور ایسے حالات پیدا کرتے ہیں کہ مظاہرے پر تشدد رخ اختیار کرلیں اور پھر انتظامی مشینری کو استعمال کرتے ہوئے عوام کی آواز کو دبا دیا جائے۔ مصیبت کے ماروں کے خلاف ہی مقدمے بن جائیں اور ان ہی کو زندان میں ڈال دیا جائے اور ان کی رہائی کے لئے رشوت کا بازار گرم کردیا جائے یعنی ہر صورت میں عوام کو ہی نچوڑ دیا جائے۔
بجلی کے بحران کے لئے مرکزی حکومت صوبائی حکومت کو اور صوبائی حکومت وفاق کو اس کا ذمہ دار ٹھہراکر عوام کی آنکھوں میں جی بھر کے دھول جھونکتے ہیں۔ عوام کے لئے بجلی اب کوئی اشیائے تعیش نہیں رہی بلکہ اب عوام کے معاش اور روٹی روزی کا انحصار بجلی کی فراہمی سے مشروط ہے۔ بجلی کی عدم فراہمی سے چھوٹے چھوٹے کاروبار تباہ ہو چکے ہیں ، دکانوں اور صنعتوں کو تالے لگ چکے ہیں۔ سب کچھ جانتے بوجھتے ہوئے بھی بجلی کے بحران سے نمٹنے میں حکومت کی عدم دلچسپی سے تو یہی ظاہر ہوتا ہے کہ حکومت نے ملک اور عوام کے مقدر کے لئے اندھیروں کا انتخاب کر لیا ہے ۔ ملک کی معاشی تباہی میں پہلے کون سی کسر باقی تھی کہ اب عوام کے لئے بھی مارو یا مر جاؤ والی صورت پیدا ہوتی جارہی ہے۔ بجٹ گزرے ابھی مہینہ بھی نہیں ہوا کہ بلند و بانگ دعوے ہوا میں تحلیل ہو گئے۔ عوام کو سنہرے سپنے دکھانے والے اب عوام کا گلا گھونٹنے پر لگ گئے ہیں۔ اب تو صورتحال ایسی ہو گئی ہے کہ
کیا ضرورت ہے رفیق برق کو یہ زحمت ہو
لاؤ ہم خود ہی نشیمن کو جلا دیتے ہیں


 
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 34 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


Arsalan, Gujranwala..............hukumraano pakitan par raham karo or pakistan ki jan chhor do q k tum logo sey koch nahi hoga halat or b kharab hn ge.
 
arsalan Posted on: Sunday, July 22, 2012


Abdul Gilani, South Africa............yeh achy logon ko vote karne ka nateja hai sab log jantey the ke ye chor han phir in ko tesri dafa azmana zarori tha ab vote dia hai to hame bhugatna bi pare ga khda bhi us qaum ki halat nahi badalta na ho jsey aap apni halat badlne ka kheyaal.
 
abdul gilani Posted on: Sunday, July 22, 2012


Akbar, Lahore........ap sach bolte hian hum sab jante hian ke ye sab leader ghaddari ker rhy hian lakin ye awam kyon so rahe hain.
 
AKBAR Posted on: Thursday, July 19, 2012


Shahid, Dubai...........pak main bijli ki kami nahi hay us ko paida karney kleiye hakoomat ko khurch karna parta hey. unit ki keemat barha ker bill pahley se zeyada leye ja rahey hain aor hakoomat aiyashi kerty hey jab ke bijli paida karney per khurch nahi kiya ja raha.is ka sirf yeh hal hey keh sub log bill ada karna bund ker dain.
 
shahid Posted on: Thursday, July 19, 2012


Rafi Mustafa Azad, Karachi............Jab tak ham apne aap ko nahi badlein gey, dunya ki koi taqat hamari haalat sahi nahi kar sakti. Hamey apni soch badalni ho gi, un matlab parast politicians se jaan chhurani ho gi, jo sirf apna bank balance barhane me lagey huay hain.
 
Rafi Mustaf Azad Posted on: Wednesday, July 18, 2012


جاوید، کراچی…جب تک عوام بے شعور رہے گی حالات ایسے ہی رہینگے۔
 
Cell 03232307831 jawaid Posted on: Tuesday, July 17, 2012


راشد چوہدری، امریکا…بجلی کی عدم دستیابی بیشک بہت بڑی پریشانی ہے لیکن کیا یہ املاک کو نقصان پہنچانے سے دورہو جائیگی اور کیا لوگوں کو ایسا کرنے کی کھلی چھٹی دیدی جائے، اس طرح مسائل بڑھیں گے کم نہیں ہونگے، سابقہ ادوار میں اس مسئلے کو نظر انداز کیا جاتا رہا اور اب یہ سنگین صورت اختیار کر چکا ہے جسے حل کرنے میں وقتت لگے گا عوام کو احتجاج کا حق ہے مگر توڑ پھوڑ کا نہیں وہ اپنے حلقے کے نمائندے سے بھی رجوع کر سکتے ہیں، اگر وہ نااہل ثابت ہو تو آئندہ اسے ووٹ نہ دیں یہی آپ کے مسئلے کا حل ہے۔
 
Rashid Chaudhry Posted on: Monday, July 16, 2012


Maqsood Ahmed, Kasur................har shakh pe ollu betha hai anjam e gulstan kia ho ga
 
maqsood ahmad Posted on: Monday, July 16, 2012


حماد احمد، فیصل آباد…جب لوڈشیڈنگ سے فیکٹریاں اور کارخانے بند ، لاکھوں مزدور بے روزگار ہوں گے اور ان کے گھروں کے چولہے بجھنے سے ان کے بچے بھوک سے بلک رہے ہوں گے،ان حالات میں بھی توقع یہ کی جائے کہ اپنے بچوں کو بھوک سے مرتے دیکھنے والے بے روزگار پرامن احتجاج کریں ،جب ان کے بچے بھوکے سوئیں گے تو اس طرح کا ردعمل فطری ہے ،مگرحکمرانوں کی فکر تو سوچکی۔
 
Hummad Ahmed Posted on: Sunday, July 15, 2012


Tariq Mehmood, Libya............JIS AWAM KO APNI HALAT BADALNE KI FIKAR NA HO US KI HALAT NAI BADALTI SAB SAY PEHLAY HAM KO APNAY APP KO THAKE KARNA HO GA.
 
tariq mehmood Posted on: Saturday, July 14, 2012


Muhammad Kibria Butt, UAE............kia bijli ki kami ko poora karne ke lye koi maseeha peda howa.
 
muhammad kibria butt Posted on: Tuesday, July 10, 2012


محمد شیر حیدری، سعودی عرب…اب تو پی پی کے پنجاب سے تعلق رکھنے والے سیاستدانوں کو اپنے سیاسی آقاؤں کو باور کرانا چاہئے کہ عوام کے ساتھ رحم کرو اور ظلم بند کرو۔
 
MUHAMMAD SHER HAIDRI Posted on: Saturday, July 07, 2012


Reenu Anjum, Islamabad..........yeh ehtjaj ka konsa tariqa hai k ap apney gher ko khod hi jala dain...is leyeh gussey ko haram kaha gaya hai..ap yeh dekhain k ap kis per gusa nikal rahain hain apni hi cheezon ko jala rahey hain..in hukmaraon ka tu koch bhi nahi jata yeh tu aram se baher bhag jain gaye rehna tu mojhy or ap ko hi hai na..pher kiun hum apne mulk ko barbad karain in zalim hukmarano k liyeh..hum sub ko ALLAH se panha or mafi mangni chayeh pata nahi humarey kon se gonha ke saza me hum ko yeh hukmaran milain hain..plz mat tabha karain apni amlak ko ..ALLAH hum se or naraz ho ga.....
 
reenu anjum Posted on: Thursday, July 05, 2012


Javed Ahktar, UAE............Mari tumam logon se guzarish hai ka Khuda ka bando apne vote ka sahi istamal karan aour jab bi elction ho apni zat pat ko kanaray rakh kar sahi umeedwar to vote do.Ab wo purani batain raja.malik,choudhar system chor kar aik pakistan ka baraa main sochai.
 
javed Akhtar Posted on: Thursday, July 05, 2012


ناصر مظفر، چنیوٹ…یہ صرف پیپلز پارٹی کی وجہ سے ہی ہے کیونکہ پنجاب میں اس کی حکومت نہِیں ہے اور وہ نواز شہباز دشمنی میں پجناب کے عوام کو سزا دے رہی ہے۔ میرے خیال میں بنیادی طور پر یہ پارٹی اقتدار پرست پارٹی ہے اور اقتدار کی خاطر وہ کسی حد تک بھی جا سکتی ہے۔ ملک توڑنے سے لے کر صوبائیت لسانیت پھیلانے اور اداروں سے ٹکراو اور کرپشن کے بازار تک تمام کام صرف اقتدار میں رہنے کے لیے وہ اپنے دشمنوں تک ہاتھ ملاتی ہے۔ دستور محبت نہیں جاں سے گزرنا کر لیتے ہیں یہ کام کبھی اہل حوس بھی
 
nasir muzaffar Posted on: Monday, July 02, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | Next
Page 1 of 3


سگریٹ نوشی سے انکار کا دن
تھر کا المیہ اورارباب اختیارکی غفلت‎
"دل ہے کہ مانتا نہیں...!"
متوان غذا صحت مند زندگی کی ضامن
شاہینوں کے بلے خوب گرجے، خوب برسے
 
انقلاب کا جھانسہ اورسادہ لوح عوام
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 36 )
انقلاب کا فرار
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 21 )
گورا رنگ ہی کیوں؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 19 )
"دل ہے کہ مانتا نہیں...!"
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 17 )
سراج الحق صاحب کی بھاگ دوڑ ۔۔۔ کھایا نا پیا گلاس توڑا بارہ آنے ۔۔
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 14 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy