لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


کرکٹ تعلقات کی بحالی، عجب سی بے قراری؟ Share
……سید شہزاد عالم……
پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ کہتے ہیں کہ بھارت سے کرکٹ روابط کی بحالی کے لئے وہ ہر بھارتی شرط ماننے کو تیار ہیں چاہے وہ ایک میچ ہی کھیلیں ، بھارت میں کھیلیں یا کسی اور نیوٹرل مقام پر کھیلیں ۔ بھارت کے ساتھ کرکٹ روابط کی بحالی ضرور ہونی چاہئے اور اس میں کسی کو کوئی اختلاف نہیں لیکن اس طرح کا کوئی میچ کھیل کے پاکستان کرکٹ کیا حاصل کر لے گی اس کا ابھی تک کچھ علم نہیں ماسوائے اس کے کہ شاید اس طرح کے روابط سے پاکستانی کھلاڑیوں کے لئے آئی پی ایل کے دروازے کھل جائیں۔ لیکن پاکستان کرکٹ کا اصل مسئلہ اپنی جگہ پر برقرار رہے گا کہ غیر ملکی ٹیمیں پاکستانی میدانوں میں آ کر کرکٹ کھیلیں۔ اس بات سے بھی ابھی کوئی آگاہ نہیں کہ کرکٹ روابط کی بحالی کے لئے بھارت کیا شرائط عائد کر رہا ہے؟ سب جانتے ہیں کہ کرکٹ روابط بھارت کی طرف سے پاکستان کے دورے سے انکار پر منقطع ہوئے اور ممبئی سانحے کے بعد سے دونوں ممالک کی ٹیمیں ایک دوسرے کے ہاں جانے سے گریزاں ہیں اور اگر کسی طرح دونوں ممالک کے بورڈز تعلقات کی بحالی پر رضامند بھی ہو جائیں تو بھی معاملات دونوں ممالک کی حکومتوں کے درمیان اس وقت تعلقات کی نوعیت پر انحصار کرینگے۔
جہاں تک آئی پی ایل میں پاکستانی کھلاڑیوں کی شرکت کا سوال ہے، تو بدلتے حالات میں اب بھارت پاکستانی کھلاڑیوں کی شمولیت کے لئے بے قرار ہو گا کیونکہ حالیہ پانچویں ایڈیشن میں جن ہوش ربا اسکینڈلز کے انکشافات ہوئے ہیں اور آنے والے دنوں میں اسپاٹ فکسنگ اور میچ فکسنگ کے جو معاملات سامنے آنے والے ہیں ان کے نتیجے میں اس بات کے خدشات بے جا نہیں ہیں کہ کئی ممالک کے کھلاڑی اگلے سیزن میں آئی پی ایل میں شرکت سے گریزاں ہوں گے، چنانچہ اسی خدشے کو سامنے رکھتے ہوئے اب بھارت کی طرف سے ایسے اشارے دیئے جارہے ہیں کہ کرکٹ روابط کی بحالی کے نتیجے میں پاکستانی کھلاڑیوں کی آئی پی ایل میں شرکت ممکن ہو سکے گی۔
کرکٹ بورڈ کو انتہائی غور و فکر کے بعد ہی کوئی قدم اٹھانا چاہئے اور ہر صورت میں پاکستانی کرکٹ کے مفادات کو مقدم رکھنا چاہئے اور اس بات کو یقینی بنانے کی ہر ممکن کوشش کریں کہ چاہے بھارتی ایک ہی میچ کھیلیں لیکن پاکستان آ کر کھیلیں!!!
shahzad.janggroup@gmail.com  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 33 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


نوید، سعودی عرب…بھارت کے ساتھ کرکٹ روابط کی بحالی ضرور ہونی چاہئے۔لیکن برابری کی بنیاد پر اور اگر پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ بھارت کے ساتھ پاکستان سے باہر کھیلنے کو کامیابی کہتے ہیں تو وہ فیل ہیں۔ ان کی کمزوری اور چاپلوسی کی حکمت عملی کبھی بھی عزت پر مبنی کرکٹ کے تعلقات بحال نہیں کرا سکتی۔
 
نوید Posted on: Sunday, June 10, 2012


شاکر محمد، یو اے ای…بھارت کے ساتھ کرکٹ روابط ضرور بحال کیے جائیں لیکن ملکی مفاد کو ضرور پیش نظر رکھا جائے۔
 
shakirmuhammad Posted on: Sunday, June 10, 2012


عروج الحسن، ڈنمارک…ہمیں ہر شعبے میں صرف پاکستان کو مقدم رکھناچاہئے۔
 
Arooj ul Hassan Posted on: Saturday, June 09, 2012


Rizwan Sami, UAE........mujhay ye samajh nahein aati k india her khail pakistan k sath khalta hai sirf cricket he kyo nhi khailta is ka to saaf matlab ye hai k wo pakistani team se derta hai.
 
rizwan sami Posted on: Saturday, June 09, 2012


Sameer Qaiser, South Africa......... Pcb ko chahiye ke wo pakisatn main ppl karway ta k pakistani players ko ipl ke kami mehsos na ho.
 
sameer Qaiser Posted on: Friday, June 08, 2012


محمد سلیم اللہ خان، میانوالی…ہم جتنا انڈیا کے پیچھے جائیں گے وہ اتنا ہی دور بھاگے گا۔
 
Muhammad Saleem Ullah Khan Posted on: Friday, June 08, 2012


Malik Masood, Lahore........Ham Pakistani hain or Alhamdo Lillah dunya janti ha k kitna talent ha iss mulk main Hamen apny peron py khara hona ha or IPL ka boycott kar k PPL ko focus karna ha.
 
Malik Masood Posted on: Friday, June 08, 2012


Naveed Ali Siddiqui, Karachi......Meray khyal mein jab tak Misbah team me ho ga, hamaray liye mushkilat rahen gi.
 
naveed ali siddiqi Posted on: Friday, June 08, 2012


Hizbullah, Quetta..........indai nahi chata hai k pakistan main koi match ho
 
hizbullah Posted on: Thursday, June 07, 2012


خالد انکل، امریکا…جب سیاچن پر برف پگھل نے کی بات ہو سکتی ہے تو کرکٹ کے میدان کیوں نہیں ہموار ہو سکتے -
 
خالد انکل Posted on: Thursday, June 07, 2012


راشد فہیم، راولپنڈی…بھارت کے ساتھ ہر شعبے میں تعلقات کی بحالی ملک کے مفاد میں ہے لیکن اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ وہ پاکستان آکر کھیلیں۔
 
Rashid Fahim Posted on: Thursday, June 07, 2012


محمد اعجاز، برطانیہ…چیئرمین کرکٹ بورڈ بھارت کے ساتھ کرکٹ روابط کی بحالی کیلئے اقدامات کریں لیکن ملکی مفادات کا ضرور خیال رکھا جائے۔
 
Muhammad ijaz Posted on: Thursday, June 07, 2012


کلیم خان، جاپان…کرکٹ روابط کی بحالی ضروری ہے لیکن پہلے مصباح کو ون ڈے ٹیم سے باہر کریں، آج کے میچ بھی انہوں نے 79 بال پر 30 رنز بنائے۔
 
kaleem khan Posted on: Thursday, June 07, 2012


Miraj Yusufzai, KPK..........Baath to 100 % sahi hy Pak ko kuch nahi milay ga is sy.. is leey wait for the best time to come.. Z Ashraf ko us rah per nahi jana chaheye jis per Ejaz Butt gaey thay.. no need to beg India for Cricket Relations.
 
Miraj Yusufzai Posted on: Thursday, June 07, 2012


Azhar Thiraj, Lahore.........pakistan ko is qadr india ki mint samajat nahin krni chahye.....yeh pakistan ki izat toqeer ka swal ha............pcb ko baqi mulkon k sath rawabit brhanay chahyein.
 
azhar thiraj Posted on: Thursday, June 07, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | Next
Page 2 of 3


اردو زبان کا نفاذ،ایک اہم قومی و آئینی ضرورت
’گو بابا گو‘ سے ’گو وٹو گو‘ تک!!
اب مستحکم فیصلے ہی پاکستانی کرکٹ کو بچاسکتے ہیں
ہاتھ دھونے کا عالمی دن
ملالہ کیلئے نوبل انعام اور سوشل میڈیا
 
قربانی سے پہلے قربانی۔۔۔۔فلم فلاپ!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 33 )
ملالہ کیلئے نوبل انعام اور سوشل میڈیا
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 11 )
بے ترتیبی ہی اب ترتیب ہوئی جاتی ہے
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 7 )
صوبائی اسمبلیوں کی پہلے سال کی کارکردگی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
اردو زبان کا نفاذ،ایک اہم قومی و آئینی ضرورت
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy