لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


بجٹ آ گیا ہے ... بجٹ ا ٓ گیا ہے Share
……فاضل جمیلی……وفاقی وزیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے موجودہ اتحادی حکومت کا پانچواں سالانہ بجٹ پیش کردیا ہے۔ پاکستان کی جمہوری تاریخ میں پانچواں بجٹ پیش کرنے میں کامیاب ہونے والی یہ پہلی حکومت ہے۔ اس لحاظ سے دیکھا جائے تو جمہوری پاکستان کے لیے یقینی طور پر یہ ایک اہم سنگ ِ میل ہے ۔جہاں تک بجٹ میں عوام کوکسی قسم کا ریلیف ملنے کا سوال ہے تو گذشتہ ہر بجٹ کی طرح اس مرتبہ بھی حکومت عوام کو ریلیف دینے میں ناکام رہی ہے۔ بجٹ سے ایک دن قبل البتہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کرکے کسی حد تک عام آدمی کی اشک شوئی کرنے کی کوشش کی گئی ۔بجٹ تقریر کے دوران پہلی مرتبہ اپوزیشن ارکان کی نعرے بازی کے دوران ہاتھا پائی بھی دیکھنے کو ملی ۔جس کی وجہ سے وزیر خزانہ کو اپنی تقریر مختصر کرنا پڑی۔حکومت اور اس کے اتحادیوں کے ساتھ ساتھ اپوزیشن جماعتوں کو بھی اگلے سال عام انتخابات میں جانا ہے ۔لہذا ہر ایک کو عوام الناس کو اپنی اپنی کارکردگی دکھانا ضروری ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ نوازشریف کی مسلم لیگ جو کچھ عرصہ پہلے تک فرینڈلی اپوزیشن بنی ہوئی تھی اب حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس کے رہنماؤں کے لہجوں میں تلخی بڑھ رہی ہے اور ہر محاذ پر حکومت سے دست و گریبان ہونے کو تیار دکھائی دیتی ہے۔نیوز چینلز کی زبان میں بات کی جائے تو دونوں اطراف کے ارکان ریٹنگ کے چکر میں جمہوری و اخلاقی اور آئینی اقدار کی دھجیاں بکھیر رہے ہیں۔

بجٹ تقریر میں وزیرخزانہ نے یہ نوید بھی سنائی ہے کہ آئی ایم ایف کو سو ارب ڈالر لوٹا دیے گئے ہیں۔بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی وجہ سے 35 لاکھ خاندانوں کو فائدہ پہنچا۔تنخواہوں اور پنشن میں بیس فیصد ایڈہاک ریلیف دیا جائے گا۔بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا۔بجلی کے بحران کے خاتمے کے لیے زیادہ سے زیادہ وسائل استعمال کرنے کا وعدہ کیا گیا ہے۔ایک خوشخبری یہ بھی سنائی گئی ہے کہ وزیراعظم ہاؤس کو ایڈوانس اسٹڈیز انسٹی ٹیوٹ میں تبدیل کر دیا جائے گا اور وزیراعظم ایک چھوٹے گھر میں منتقل ہو جائیں گے۔دیکھنا یہ ہے کہ جو بجٹ تجاویز پیش کی گئی ہیں اور جو وعدے کیے ہیں ان پر عملدرآمد کے نتیجے میں عوام الناس کو کسی قسم کا ریلیف میسر آتا ہے کہ نہیں ۔بجلی مہنگی ہو رہی ہے۔ لوڈشیڈنگ کا عذاب الگ سے ہے ۔ بے روزگاری اور مہنگائی ایسے عفریت ہیں جو نوجوان نسل کو مایوسی کی گہری کھائی میں دھکیل رہے ہیں۔ تعلیم کی کوئی ضمانت نہیں ہے۔ غیر ملکی قرضوں پر انحصار کم کرنے اور خود انحصاری کی راہ اپنانے کے لیے کوئی روڈ میپ نہیں دیا گیا ۔حکومت ہو یا اپوزیشن خوش کن نعرے لگا کر اور سہانے خواب دکھا کر الیکشن تو جیت سکتی ہیں لیکن ملک و قوم کی حقیقی نمائندگی کا اعتبار اس وقت تک حاصل نہیں کر سکتیں جب تک عام لوگوں کو تعلیم نہیں ملے گی ۔ روزگار نہیں ملے گااور عزت ِ نفس کے ساتھ زندگی کرنے کا معیار نہ ملے گا۔

بجٹ آ گیا ہے ، بجٹ آگیا ہے ۔۔۔لیے پھر نئی ایک لٹھ آ گیا ہے ۔۔۔کسی کو توقع سے بڑھ کر ملا ہے ۔۔۔کسی کی امیدوں سے گھٹ آ گیا ہے۔  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 122 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


M. Shamim Ahmed, Canada.........Geo neews ki yeh qawish k her khaber tabsra khubsorti k sath elahda elahda dekha jasakey pasand aya.
 
m shamim ahmed Posted on: Thursday, June 07, 2012


M. Shamim Ahmed, Canada.........Geo neews ki yeh qawish k her khaber tabsra khubsorti k sath elahda elahda dekha jasakey pasand aya.
 
m shamim ahmed Posted on: Thursday, June 07, 2012


Raja Shoaib Adnan , Lahore..........Sar is bajjat ka koi faida nye jis main gareeb bandy ko madaynazar na rakha jye agar kuch faida hota hai hai to government ka hota hai bs is sy zayada kuch nye hota is hakumat ny na gareeb awam ko roti kapra makan to dur jo gareeb awam k pas hai wo b chhen lia hai pakistan azeem watan ko sub sy kamzoor dil awam bnany ki kasam khaye hai hakumat ny aur pury ka pura mulk khatm kar dain gay aysy hukmaran
 
Raja Shoaib Adnan Posted on: Thursday, June 07, 2012


Raja Shoaib Adnan , Lahore..........Sar is bajjat ka koi faida nye jis main gareeb bandy ko madaynazar na rakha jye agar kuch faida hota hai hai to government ka hota hai bs is sy zayada kuch nye hota is hakumat ny na gareeb awam ko roti kapra makan to dur jo gareeb awam k pas hai wo b chhen lia hai pakistan azeem watan ko sub sy kamzoor dil awam bnany ki kasam khaye hai hakumat ny aur pury ka pura mulk khatm kar dain gay aysy hukmaran
 
Raja Shoaib Adnan Posted on: Thursday, June 07, 2012


Ahmed Ali, yeh sab drama hai, jab yeh siasatdaan nahein hongey tab hi .awam sukh ka sance kain gain aamin
 
ahmed ali Posted on: Thursday, June 07, 2012


Ahmed Ali, yeh sab drama hai, jab yeh siasatdaan nahein hongey tab hi .awam sukh ka sance kain gain aamin
 
ahmed ali Posted on: Thursday, June 07, 2012


Khurram Manzoor , Karachi..........bajat aa gaya hai awam ko mazeed maarney k liye.
 
Khurram Manzoor Posted on: Thursday, June 07, 2012


Khurram Manzoor , Karachi..........bajat aa gaya hai awam ko mazeed maarney k liye.
 
Khurram Manzoor Posted on: Thursday, June 07, 2012


M.Nasrullah, Islamabad...........Budget To Aya , Magar National Assembly main Larai ur Markotai kay sath. Muslim league (N) lagta hai Hakomat kay sath sath National Assembly KO bhi lay baithay gi. Tammam Jammatoon ko mil ker Awam ki Mushkalat door kerni chahiya aur Mulk ko mushkil waqt sey mil ker nikalna chahiyay.
 
M.Nasrullah Posted on: Wednesday, June 06, 2012


M.Nasrullah, Islamabad...........Budget To Aya , Magar National Assembly main Larai ur Markotai kay sath. Muslim league (N) lagta hai Hakomat kay sath sath National Assembly KO bhi lay baithay gi. Tammam Jammatoon ko mil ker Awam ki Mushkalat door kerni chahiya aur Mulk ko mushkil waqt sey mil ker nikalna chahiyay.
 
M.Nasrullah Posted on: Wednesday, June 06, 2012


Sameer Siddiqi, Islamabad...........WAH G WAH MEHNGAAI 500% AOR PAY 20% GILANI SAHAB KYA YEH INSAAF HY? IS SE ACHA TO 20% DEDUCT KR DETY PAY GOVT SERVANTS KI.
 
Sameer Siddiqi Posted on: Wednesday, June 06, 2012


Sameer Siddiqi, Islamabad...........WAH G WAH MEHNGAAI 500% AOR PAY 20% GILANI SAHAB KYA YEH INSAAF HY? IS SE ACHA TO 20% DEDUCT KR DETY PAY GOVT SERVANTS KI.
 
Sameer Siddiqi Posted on: Wednesday, June 06, 2012


Ahssan ur Rahman, Lahore.........Ghareeb awam kay saath ek or mazak.
 
Ahssan ur Rahman Posted on: Wednesday, June 06, 2012


Ahssan ur Rahman, Lahore.........Ghareeb awam kay saath ek or mazak.
 
Ahssan ur Rahman Posted on: Wednesday, June 06, 2012


Ahmed, Lahore.........hum democracy sun sun ker pagal hogaey hain hum ko yeh democracy nahi chaiye hum ko bijli chahiye hum ko sasti roti chahiye khuda k liya hukumat say kahayn k hamari jaan chhor dey.
 
ahmad Posted on: Tuesday, June 05, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | Next
Page 3 of 9


ایدھی صاحب اب بھی زندہ رہ سکتے ہیں ۔۔۔؟؟
جو دلوں کو فتح کرلے ۔۔۔ وہی فاتح زمانہ
یہ کون چلا گیا لوگو ۔۔؟؟
خواتین کی عید شاپنگ اور بیچارے مرد
دیکھیں ذرا چاند عید کا
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy