لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


وفاقی بجٹ 2012 ء کیسا ہو! Share
……سید شہزاد عالم……
وفاقی بجٹ 2012 ء کی آمد آمد ہے اور ملک کے مختلف طبقات کی جانب سے بجٹ تجاویز پیش کی جا رہی ہیں۔ بلاشبہ موجودہ تباہ حال معاشی صورتحال میں متوازن اور عوام دوست بجٹ پیش کرنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے لیکن ملک کو درپیش مشکل صورتحال اور عوام کی حالت زار کو دیکھتے ہوئے حکومت کو ترقیاتی بجٹ کی ترجیحات کا ازسر نو تعین کرنا ہو گا۔ اس بار متحدہ قومی موومنٹ نے بھی ایک شیڈو بجٹ پیش کر کے عمدہ اور قابل تقلیدمثال پیش کی ہے۔
الیکشن بھی سر پر ہیں، چنانچہ حکومت کی بھرپور کوشش ہو گی کہ ایسا عوامی بجٹ پیش کیا جائے جس سے آئندہ الیکشن میں اسے بھرپور فائدہ ہو لیکن یہ خدشات بھی اپنی جگہ موجود ہیں کہ کہیں حکومت عوامی بجٹ کے چکر میں ایسے غیر حقیقت پسندانہ اقدامات نہ کر گزرے جس سے وقتی طور پر تو واہ واہ ہو جائے لیکن آئندہ آنے والے مہینوں میں اس کے بھیانک نتائج دیکھنے کو ملیں۔
یہ حقیقت تو سب پر عیاں ہے کہ ماضی کی تمام حکومتوں کی غلط ترجیحات، غیر حقیقی معاشی پالیسیاں، امداد اور قرضوں پر انحصار اور ہوش ربا کرپشن نے ملکی معیشت کو تباہی کے کنارے پر پہنچادیا ہے۔ مہنگائی، بیروزگاری، غربت اور دہشت گردی نے عوام کو زندہ درگور کر دیا ہے۔ اب ضرورت اس بات کی ہے کہ مہنگائی، لوڈشیڈنگ، دہشت گردی اور بیروزگاری کے عفریت کو قابو میں کرنے کے لئے حکومت اپنی ترجیحات کا ازسرنو تعین کرے اور وسائل میں اضافے اور آمدنی پیدا کرنے والا بجٹ پیش کیا جائے۔ توانائی کے بحران پر قابو پانے کے لیے حکومت فوری عمل کرے ، ماہرین کے مطابق لگ بھگ 19ہزار میگاواٹ بجلی کی پیداواری صلاحیت سسٹم میں موجود ہے ،حکومت صرف سرکولر ڈیبٹ کا مسئلہ حل کرے، لوڈشیڈنگ ختم ہوجائے گی۔ پاکستان کو آئی ایم ایف کے ہاتھوں بیچنے سے بہتر ہے اپنے لوگوں کے ہاتھ بیچ دیا جائے۔ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو سرمایہ کاری کی ترغیب دی جائے، ان کے اعتماد کو بحال کرنے کے لیے حکومت ٹھوس اور نتیجہ خیز اقدامات کرے۔ ریونیو میں اضافے کے لیے وسائل میں اضافہ کیا جائے حکومت اپنے اخراجات کم کرے کرپشن پر قابو پائے،خودانحصاری کی طرف جایا جائے اور نئے ٹیکس دہندگان تلاش کیے جائیں۔
اس بار بجٹ میں تعلیم،صحت اور سوشل سیکٹر کو مطمئن کرنا بے حد ضروری ہے۔ کاروباری ماحول کی بحالی کے لئے امن و امان پر خصوصی توجہ دی جائے کیونکہ اگر مقامی صنعت کار سرمایہ کاری کے لیے تیار نہیں تو غیر ملکی سرمایہ کار کہاں سے آئیں گے اور کیوں آئیں گے ؟ بھتہ مافیا سے تاجروں کو ہر قیمت پرنجات دلائی جائے۔ بڑے بڑے جاگیرداروں پر زرعی ٹیکس عائد کیا جائے ۔ کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں کو کم کرانے کے لئے حکومت نچلی سطح پر موثر اقدامات کرے اور منافع خوروں کی سیاسی سرپرستی کا خاتمہ کر کے ان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔
چین ہمیں اپنی منڈیوں تک رسائی دینے کے لئے تیار ہے تو ہمیں اس سے فوری اور بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے۔پیداواری لاگت میں اضافے سے صنعتیں بند ہورہی ہیں، ٹیکسائل سیکٹر کی ہزاروں صنعتیں بند ہو چکی ہیں اور دوسرے ممالک منتقل ہو رہی ہیں جس کے نتیجے میں بے روزگاری میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ شفاف نجکاری کے ذریعے خسارے والے اداے نجی سیکٹر کو دیے جائیں، نئے انڈسٹریل زونز بنائیں جائیں۔ ہڑتال کے بڑھتے ہوئے رجحان کی حوصلہ شکنی کی جائے اور اگر ورکرز نے ہڑتال کرنی بھی ہو تو صرف انڈسٹری کی حد تک ہو، شہر کو بند نہ کیا جائے اور نہ ہی سڑکوں پر ٹائر جلا کر اور جلاؤ گھیراؤ کر کے امن و امان خراب کیا جائے۔
چند برسوں میں مہنگائی میں چھ سو فی صد اضافہ ہوا لیکن اس کی نسبت تنخواہیں بہت کم بڑھائی گئیں۔ مزدور کی کم از کم تنخواہ 15ہزار روپے ہونی چاہیے۔سات ہزار روپے تنخواہ بھی مزدور کو نہیں دی جارہی،حکومت اپنے اعلان پر عمل درآمد کرائے، جبکہ نجی اداروں میں بھی تنخواہوں میں اضافے کو مہنگائی کے تناسب سے ممکن بنانے کیلئے اقدامات کیے جائیں۔
معزز قارئین! بجٹ براہ راست آپ کی زندگیوں پر اثر انداز ہوتا ہے ، اس اہم موقع پر آپ کی تجاویز اور تبصرے شاید حکمرانوں کی نظروں سے گزر جائے۔  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 104 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


Iftikhar Ahmad, Muridke...........hakummat agar mulazmin ki tankhon mein 25,30 parsant azafa karti hai 1 tu dosri taraf tamam rooz mara istmal ki cheezon ki qimaten 50 parsant barh jati hain or mulazmin bas mehngay ki chakki mein phistay rehtay hain hakumat ko chahiye yah tu chezon ki qimat ko musar tariqa se kantrol karen ya malazmeen ki tankhuwa mein kam az kam 100 parsant aazafa kare.
 
iftikhar ahmad Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Nida Imran, Lahore.........plz load shedding aur mehangai ka khayal rakhain.
 
nida imran Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Nida Imran, Lahore.........plz load shedding aur mehangai ka khayal rakhain.
 
nida imran Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Asif Rashid, Peshawar..........Government Jobs say Pabandi uttani Chahye ta k logo ko rozgar mil sakay...
 
Asif Rashid Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Asif Rashid, Peshawar..........Government Jobs say Pabandi uttani Chahye ta k logo ko rozgar mil sakay...
 
Asif Rashid Posted on: Tuesday, May 29, 2012


mera sawal nawaz shareef our Imran khan se hai ke ager aap ko hakoomat mil jaye to kia aap mulak ke halaat theek ker dein gey. bijli paani gas aur mehngai , berozgaari per qaabu paa lein ge. aap ke paas koun sa jin hai. hamarey mulak ki haalt uss ghareeb admi ki tarah hain jo anpey bachchon ki ta'daad to barhaata hai mager unn kay liye chaarpai nahi bnata. jab mulak mein bijli hai he nahi to aap dein ge kahan se . yeh sub bewqoofi hum awaam ki hai. Allah hum per rehem karey.
 
ashiq hussain Posted on: Tuesday, May 29, 2012


mera sawal nawaz shareef our Imran khan se hai ke ager aap ko hakoomat mil jaye to kia aap mulak ke halaat theek ker dein gey. bijli paani gas aur mehngai , berozgaari per qaabu paa lein ge. aap ke paas koun sa jin hai. hamarey mulak ki haalt uss ghareeb admi ki tarah hain jo anpey bachchon ki ta'daad to barhaata hai mager unn kay liye chaarpai nahi bnata. jab mulak mein bijli hai he nahi to aap dein ge kahan se . yeh sub bewqoofi hum awaam ki hai. Allah hum per rehem karey.
 
ashiq hussain Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Ehtisham, Burnala........pakistan ka abi kai bacha hai jab tak maujooda hakomat rahy gi tab tak koch nahi hoga ,plz pakistain k baray main humy sochna chai.
 
ehtisham Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Ehtisham, Burnala........pakistan ka abi kai bacha hai jab tak maujooda hakomat rahy gi tab tak koch nahi hoga ,plz pakistain k baray main humy sochna chai.
 
ehtisham Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Ahmed Khan, Tandoadam...........Sab sey Pehlay zaroorat iss amr ki hai keh Jagirdaron ko Tax System mai laya jaye aur agr emandari sey tax wasool kiya jaey to mulk mai her cheez ki kami ko pura kia ja sakta hai.
 
ahmed khan Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Ahmed Khan, Tandoadam...........Sab sey Pehlay zaroorat iss amr ki hai keh Jagirdaron ko Tax System mai laya jaye aur agr emandari sey tax wasool kiya jaey to mulk mai her cheez ki kami ko pura kia ja sakta hai.
 
ahmed khan Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Nizam ud Din, Rawalpindi...........Bijli ka mustaqil hal China k taawon se talash kar k awam ko mutmaen karna hoga Afsar Shahi se mukammal kinara kashi karna hogi, Govt ki satah par sirf zaroori ikhrajaat ki ejazat de kar fazool kharchi ko bilkul tark karna hoga. America ko saaf jawab de kar qomi khud enhisari ka entikhab karna hoga, warna hamari daastan tak bhi na hogi daastanon main. Allah Pakistan ki hifazat farmae.
 
Nizam ud Din Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Nizam ud Din, Rawalpindi...........Bijli ka mustaqil hal China k taawon se talash kar k awam ko mutmaen karna hoga Afsar Shahi se mukammal kinara kashi karna hogi, Govt ki satah par sirf zaroori ikhrajaat ki ejazat de kar fazool kharchi ko bilkul tark karna hoga. America ko saaf jawab de kar qomi khud enhisari ka entikhab karna hoga, warna hamari daastan tak bhi na hogi daastanon main. Allah Pakistan ki hifazat farmae.
 
Nizam ud Din Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Syed Muhammad Ali Bilgrami, Karachi..........mein tu sirf itna kehna chahoon ga ka jesa her mulk ma center worker monitering department hota hai jis ka kam salaries or buget ka comparison kar ka private sector ma salary increment ko watch karna or rights of empolyees ki hafazat karna hai lakin is ka faida jab hi hoo ga jab awam khudh ko sudharnay ki sochain.
 
syed muhammad ali bilgrami Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Syed Muhammad Ali Bilgrami, Karachi..........mein tu sirf itna kehna chahoon ga ka jesa her mulk ma center worker monitering department hota hai jis ka kam salaries or buget ka comparison kar ka private sector ma salary increment ko watch karna or rights of empolyees ki hafazat karna hai lakin is ka faida jab hi hoo ga jab awam khudh ko sudharnay ki sochain.
 
syed muhammad ali bilgrami Posted on: Tuesday, May 29, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | Next
Page 4 of 7


ہے جذبہ جنوں تو ہمت نہ ہار ۔۔۔
عوام کےدل بہتر کارکردگی سے ہی جیتے جاسکتے ہیں
ایدھی صاحب اب بھی زندہ رہ سکتے ہیں ۔۔۔؟؟
اور قندیل بجھ گئی
جو دلوں کو فتح کرلے ۔۔۔ وہی فاتح زمانہ
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy