لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


وفاقی بجٹ 2012 ء کیسا ہو! Share
……سید شہزاد عالم……
وفاقی بجٹ 2012 ء کی آمد آمد ہے اور ملک کے مختلف طبقات کی جانب سے بجٹ تجاویز پیش کی جا رہی ہیں۔ بلاشبہ موجودہ تباہ حال معاشی صورتحال میں متوازن اور عوام دوست بجٹ پیش کرنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے لیکن ملک کو درپیش مشکل صورتحال اور عوام کی حالت زار کو دیکھتے ہوئے حکومت کو ترقیاتی بجٹ کی ترجیحات کا ازسر نو تعین کرنا ہو گا۔ اس بار متحدہ قومی موومنٹ نے بھی ایک شیڈو بجٹ پیش کر کے عمدہ اور قابل تقلیدمثال پیش کی ہے۔
الیکشن بھی سر پر ہیں، چنانچہ حکومت کی بھرپور کوشش ہو گی کہ ایسا عوامی بجٹ پیش کیا جائے جس سے آئندہ الیکشن میں اسے بھرپور فائدہ ہو لیکن یہ خدشات بھی اپنی جگہ موجود ہیں کہ کہیں حکومت عوامی بجٹ کے چکر میں ایسے غیر حقیقت پسندانہ اقدامات نہ کر گزرے جس سے وقتی طور پر تو واہ واہ ہو جائے لیکن آئندہ آنے والے مہینوں میں اس کے بھیانک نتائج دیکھنے کو ملیں۔
یہ حقیقت تو سب پر عیاں ہے کہ ماضی کی تمام حکومتوں کی غلط ترجیحات، غیر حقیقی معاشی پالیسیاں، امداد اور قرضوں پر انحصار اور ہوش ربا کرپشن نے ملکی معیشت کو تباہی کے کنارے پر پہنچادیا ہے۔ مہنگائی، بیروزگاری، غربت اور دہشت گردی نے عوام کو زندہ درگور کر دیا ہے۔ اب ضرورت اس بات کی ہے کہ مہنگائی، لوڈشیڈنگ، دہشت گردی اور بیروزگاری کے عفریت کو قابو میں کرنے کے لئے حکومت اپنی ترجیحات کا ازسرنو تعین کرے اور وسائل میں اضافے اور آمدنی پیدا کرنے والا بجٹ پیش کیا جائے۔ توانائی کے بحران پر قابو پانے کے لیے حکومت فوری عمل کرے ، ماہرین کے مطابق لگ بھگ 19ہزار میگاواٹ بجلی کی پیداواری صلاحیت سسٹم میں موجود ہے ،حکومت صرف سرکولر ڈیبٹ کا مسئلہ حل کرے، لوڈشیڈنگ ختم ہوجائے گی۔ پاکستان کو آئی ایم ایف کے ہاتھوں بیچنے سے بہتر ہے اپنے لوگوں کے ہاتھ بیچ دیا جائے۔ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو سرمایہ کاری کی ترغیب دی جائے، ان کے اعتماد کو بحال کرنے کے لیے حکومت ٹھوس اور نتیجہ خیز اقدامات کرے۔ ریونیو میں اضافے کے لیے وسائل میں اضافہ کیا جائے حکومت اپنے اخراجات کم کرے کرپشن پر قابو پائے،خودانحصاری کی طرف جایا جائے اور نئے ٹیکس دہندگان تلاش کیے جائیں۔
اس بار بجٹ میں تعلیم،صحت اور سوشل سیکٹر کو مطمئن کرنا بے حد ضروری ہے۔ کاروباری ماحول کی بحالی کے لئے امن و امان پر خصوصی توجہ دی جائے کیونکہ اگر مقامی صنعت کار سرمایہ کاری کے لیے تیار نہیں تو غیر ملکی سرمایہ کار کہاں سے آئیں گے اور کیوں آئیں گے ؟ بھتہ مافیا سے تاجروں کو ہر قیمت پرنجات دلائی جائے۔ بڑے بڑے جاگیرداروں پر زرعی ٹیکس عائد کیا جائے ۔ کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں کو کم کرانے کے لئے حکومت نچلی سطح پر موثر اقدامات کرے اور منافع خوروں کی سیاسی سرپرستی کا خاتمہ کر کے ان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔
چین ہمیں اپنی منڈیوں تک رسائی دینے کے لئے تیار ہے تو ہمیں اس سے فوری اور بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے۔پیداواری لاگت میں اضافے سے صنعتیں بند ہورہی ہیں، ٹیکسائل سیکٹر کی ہزاروں صنعتیں بند ہو چکی ہیں اور دوسرے ممالک منتقل ہو رہی ہیں جس کے نتیجے میں بے روزگاری میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ شفاف نجکاری کے ذریعے خسارے والے اداے نجی سیکٹر کو دیے جائیں، نئے انڈسٹریل زونز بنائیں جائیں۔ ہڑتال کے بڑھتے ہوئے رجحان کی حوصلہ شکنی کی جائے اور اگر ورکرز نے ہڑتال کرنی بھی ہو تو صرف انڈسٹری کی حد تک ہو، شہر کو بند نہ کیا جائے اور نہ ہی سڑکوں پر ٹائر جلا کر اور جلاؤ گھیراؤ کر کے امن و امان خراب کیا جائے۔
چند برسوں میں مہنگائی میں چھ سو فی صد اضافہ ہوا لیکن اس کی نسبت تنخواہیں بہت کم بڑھائی گئیں۔ مزدور کی کم از کم تنخواہ 15ہزار روپے ہونی چاہیے۔سات ہزار روپے تنخواہ بھی مزدور کو نہیں دی جارہی،حکومت اپنے اعلان پر عمل درآمد کرائے، جبکہ نجی اداروں میں بھی تنخواہوں میں اضافے کو مہنگائی کے تناسب سے ممکن بنانے کیلئے اقدامات کیے جائیں۔
معزز قارئین! بجٹ براہ راست آپ کی زندگیوں پر اثر انداز ہوتا ہے ، اس اہم موقع پر آپ کی تجاویز اور تبصرے شاید حکمرانوں کی نظروں سے گزر جائے۔  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 52 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


Idrees Khan, Swabi..........Awami Bajat hona chahe ta ka aamm admi ko bhi relief milay.
 
Idrees Khan Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Shahbaz, Lahore..........goverment election ki khatir relief degi awam ko jo k awam ko 4 guna zada pay karni parhen gi .ma samajta ho k ye budget mulk k lie bohat aham ha mulk aagey hi bohat burey haalat se guzar raha ha.
 
shahbaz Posted on: Tuesday, May 29, 2012


M.ZAHID, KHANEWAL.......HER FARMER PERSHAN HAY WAHAAN NA PANI HAY NA BEJLI AGER ASAY HALAT RAHY TO YAY LOG KIA KARIAN GEY SIRF GST KHATM HO JAY TO FARMER KUCH KUSHHAL HO GA.
 
M.ZAHID Posted on: Tuesday, May 29, 2012


Mukhlis Rahi, Karachi.........Jis mulk main aamirana jamhoriyet ho wahan awam ko siwae biyan-bazi kay aur kia mil sakta hai bhala.
 
Mukhlis Rahi Posted on: Tuesday, May 29, 2012


خلیل فیروز بلب والا، برطانیہ…ہمارے حکمرانوں کو اپنے اخراجات میں کمی کرنی چاہئے اور قوم کے سامنے سادہ طرز زندگی کی مثال بننا چاہئے۔ قرضے پر انحصار کم کیا جائے، قوم بجٹ سے متعلق ہر ایشو پر حمایت کرے گی۔
 
khalil feroz bulbwala Posted on: Monday, May 28, 2012


راشد خان، گڑھی حبیب اللہ…حکومت عوامی بجٹ کے چکر میں مہنگائی لوڈشیڈنگ،پیٹرول کی قیمیتیں اور بیروزگاری کے عالمی ریکارڈ قائم کر ے گی
 
Rashid khan Posted on: Monday, May 28, 2012


محمد کلیم فاروقی، شکاگو…بجٹ کیسا ہو، ایسے موضوع پر اتنا کہنا ہی کافی ہے کہ خواب دیکھنے میں نہ کوئی حرج ہے نہ پابندی، لیکن زمینی حقائق اور سیاسی اور معاشی بونوں کی کج فہمی سے یقینی ہے کہ یہ ریکارڈ آمدنی اور اخراجات والا بجٹ ہو گا جس سے بجلی بھی آجائے گی سرکاری نوکریوں میں بھی اضافہ ہوگا، تنخواہوں میں بھی اضافہ ہو گا، بینظیر انکم سپورٹ میں بھی اضافہ ہوگاجس کے لیے سرکاری آمدنی میں بھی بڑا اضافہ ہوگا جس کے لئے غیر ملکی امداد پر بھی انحصار نہیں کیا جائے گا اور سب کے لئے صرف ایک حکومتی ادارہ دن رات کام کرے جس کا نام ہے سیکیورٹی پرنٹنگ پریس اور حکمران اگلے پانچ سال کے حق حکمرانی حاصل کر لینگے لیکن بعد میں کیا ہوگا بس پانی سر سے گزر چکا ہو گا۔
 
محمد کليم فاروقي - شکاگو Posted on: Monday, May 28, 2012


Nida, Lahore........buss iss budget mein awam kay liyay koi acha ho aur plz load sheding ko kam kiya jaye.
 
nida Posted on: Monday, May 28, 2012


آصف رشید، پشاور…سرکاری ملازمین کی تنخواہیں 200 فیصد بڑھنی چاہئیں۔
 
Asif Rashid Posted on: Monday, May 28, 2012


SARDAR MUNIR AKHTER, TAXILA........budget tankhuwadar tebqey kay liyay to khush qismt ho ga lekin ghareeb aur bayrozgaar kya karain gay gareebon k leya to zaher b mehnga ho gya hai
 
SARDAR MUNIR AKHTER Posted on: Monday, May 28, 2012


Naeem Farooqi, Rawalpindi.........Humein Salaries mein increment nahi chahye balke mehngai mein kami chahye. pls Government Aisa koi budget lai to manoo.
 
Naeem Farooqi Posted on: Monday, May 28, 2012


Abdul Ghafoor, UK........pakistan ko america aur europe ke changal se nikalna hoga apni zarai aur santi paidawar ko barhana hoga aur qualtiy ko behtar karna hoga ye kitni sharam ki baat ha ke pakistan ko islam ka qilla kehte han jab ke pakistan mein log maut ke saaey mein jeetay hain, beging karke koi mulik ya kaum traki nai karsakty apne mulik ke halat behter karen ge to tarki ho gi
 
abdul ghafoor Posted on: Monday, May 28, 2012


مسعود محمود ملانہ، شجاع آباد…اس بجٹ میں صرف تیل بجلی گیس خوردنوش اشیاء کی قیمتوں مین کمی کی جاۓ غریب عوام کےحال پہ رحم کیا جاۓ اگرحالات ان سےکنٹرول سےباھرھیں تواس ملک کیجان چھوڑدین...
 
مسعودمحمودملانہ Posted on: Monday, May 28, 2012


محمد راشد، کراچی…بجٹ کی بنا تے وقت عوامی مسا ءل کومدنظر رکھا جاءے۔تاکہ انہیں حل کر نے میں آسانی ہو
 
محمد راشد، Posted on: Monday, May 28, 2012


نازنین، کراچی…حکومتی بجٹ کا تمام تر دارومدار امریکی امداد اور نیٹو سپلائی کی بحالی کی صورت میں حاصل ہونے والی آمدنی کی صورت میں تھا، یہ صورت حال امریکا کے علم میں بھی ہے اور اسی لئے وہ متبادل راستوں کی دھمکی دے کر زیادہ سے زیادہ شرائط منوانا چاہتا ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ یہ تمام صورت حال عوام کے علم میں لاکر انہیں قربانی دینے پر آمادہ کیا جائے اور حکومت سے جہاں تک ہوسکے اپنی عیاشیاں اور شاہ خرچیاں ختم کرکے عوام دوست بجٹ پیش کرے۔اگر حکومت سادگی کی طرف ایک قدم بڑھائے تو عوام سو قدم بڑھانے کو تیار ہیں لیکن یہاں قربانیاں ہمیشہ عوام سے مانگی جاتی ہیں اور وہ بھی اپنی عیاشایاں پوری کرنے کے لیے۔ جب سے موجودہ حکومت آئی ہے، اس نے ایسا کون سا قابل ذکر کام کیا ہے جس پر فخر کرسکے اور عوام سے اس کی بنیاد پر دوبارہ منتخب ہوسکے۔انہیں بھی معلوم ہے کہ اگلے انتخابات میں ان کا جیتنا ناممکن ہے لہٰذا جتنا اس ملک کو اس دور اقتدار میں لوٹ سکتے ہو لوٹ لو حمام میں سب ننگے ہوکر اس بہتی گنگا میں ہاتھ منہ دھورہے ہیں۔اللہ ہمیں ان ظالم حکمرانو سے نجات دے۔ آمین
 
نازنین Posted on: Monday, May 28, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | Next
Page 3 of 4


سعید اجمل کی معطلی اور سوشل میڈیا
تانيا تحريکی کی دہائی
چینی صدر کا دورہ ملتوی ،سوشل میڈیا پر ردعمل
آزادی انقلاب مارچ اور صحافی
انقلابی مون سون
 
تانيا تحريکی کی دہائی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 41 )
چینی صدر کا دورہ ملتوی ،سوشل میڈیا پر ردعمل
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 32 )
سول نافرمانی تحریک!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 30 )
انقلابی مون سون
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 30 )
لفظوں کے انتخاب نے رسوا کیا تجھے
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 26 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy