لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


بش کو جوتے پڑگئے ! Share
غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق عراق کے الوداعی دورے پر آئے امریکی صدر بش نے وزیر اعظم نور المالکی کے ہمراہ بغداد میں واقع ان کے دفتر میں پریس کانفرنس کے دوران اس وقت صورتحال مضحکہ خیز ہوگئی جب ایک عراقی صحافی نے صدر بش کو مخاطب کرتے ہوئے کہا”کتے یہ الوداعی بوسہ ہے“۔ اس کے بعد اس صحافی نے اپنا ایک جوتا اتارتے ہوئے بش کی جانب پھینکا ، صدر بش نے مہارت سے جوتا لگنے سے پہلے ہی اپنا سر جھکا دیا اور اپنے آپ کو بچالیا۔دوسرا جوتا امریکی پرچم کو لگا۔ سیکیورٹی اہلکار اس صحافی کو گھسیٹتے ہوئے کو اس جگہ سے لے گئے۔ اس موقع پر صدر بش نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم اس نے ایسا کیوں کیا، جوتا10نمبر کا تھا، مجھے کوئی پریشانی نہیں ہوئی۔

آپ کے خیال میں کیاصحافی کا یہ عمل عراقی عوام کی طرف سے صدر بش کے خلاف غصے کا اظہار نہیں تھا ؟ اس واقعہ پر آپ کیا کہیں گے ؟  
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 157 ) احباب کو بھیجئے
 
  ShareThis

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard


-سید محمد علی اعظم، دوبئی ہمیں عراقی صھافی کی بندش اور اس پر تشدد سے پریشان ہوئی ہے ہم اس کی مذمت کرتے ہیں سچ بولنے کی سزا دی جارہی ہے ہم اس کی سلامتی کی دعاء کرتے ہیں،
 
SYED MUHAMMAD ALI AZAM Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-محمد اسد، سکھر۔ یہ بہت اچھااور درست سمت میں ایک قدم تھا،
 
mohammad asad Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-میاں احسان الہی، گجرانوالا، میری رائے میں اس پر تو گندے انڈے مارنا چہایئے تھے کاش یہ کتے کی موت مرے
 
Mian Ahsan Elahi Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-شعیب عباس، لاہور۔ یہ بہت اچھا کام ہوگیا،
 
shoaib abbas Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-فاروق، لاہور، اس صھافی نے بڑا کارنامہ انجام دیا ہے میں اسے خراج تحسین پیش کرتا ہوں،
 
Farooq Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-سید احمد صدیقی۔ اگر وہ جوتا بش کے منہ پر پڑجاتا کتنا مزہ آجاتا، میں اس صحافی کو دلی مبارکباد پیش کرتی ہون جس نے ایک کارنامہ انجام دیا ہے، اس نے لاکھوں مسلمانوں کے دل جیت لئے ہیں اللہ اسے خوش رکھے،
 
Sayab Ahmed Siddiqui Posted on: Tuesday, December 16, 2008


-مخلس راہی، کراچی، عراقی صحافی نے بش کو جوتے مارے کے بہت اچھا کام کیا ہے امریکی حکومت کو احساس ہونا چاہیئے کہ کسی ملک پہ قبضہ کرنا اتنا آسان نہیں ہوتا، کچھ بھگتنا بھی پڑتا ہے جوتے کی شکل میں،
 
Mukhlis Rahi Posted on: Monday, December 15, 2008


-محمد اکرام ۔ صوابی، میں دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں اس صحافی کو جس نے یہ کارنامہ انجام دیا ہے، بش کو پڑنے والا جوتا بہت بیش قیمت بن گیا ہے اس صحافی کو اللہ اپنی شفقت سے نوازے،
 
Muhammad Ikram Posted on: Monday, December 15, 2008


-لقمان شاہ، کویت، کاش یہ جوتا اسکے منہ پہ لگ جاتا، میں اس صحافی کو سلام پیش کرتا ہوں
 
luqma shah Posted on: Monday, December 15, 2008


-محمد منصور ملک،جس قدر اس ملعون نے مسلمانوں کو نقصان پہنچایا اس کا یہی انجام سب کے سامنے ہے، ساری دنیا کے ظالم حکمرانوں کو ا س سے سبق حاصل کرنا چاہیئے۔
 
MOHAMMAD MANSOOR MALIK Posted on: Monday, December 15, 2008


-لقمان، سعودی عرب ، کاش یہ جوتا اس صحافی کے منہ پہ لگ جاتا ۔ اس صحافی کو عراق کا صدر ہونا چاہیئے
 
لقمان Posted on: Monday, December 15, 2008


-محسن دوہتر، حافظ آباد، یہ بش کے لئے ایک اچھا ایوارڈ ہے عراقیوں کی جانب سے،ہم سب مسلمان اسے فخریہ مبارکباد پیش کرتے ہیں، یہ حرکت ہمارے حکمرانوں کے ہوش اڑانے کے لئے کافی ہے
 
MOHSIN DHOTHAR Posted on: Monday, December 15, 2008


-ذیشان احمفد خان ۔دوبئی، یہ کسی بھی ملک کے صدر کے لئے ذلت کا مقام ہے اور اس کے نتیجے میں اب شاید امریکہ اپنی پالیسیاں تبدیل کرلے۔
 
zeeshan ahmed khan Posted on: Monday, December 15, 2008


-انعام اللہ شاہ،لاہور، مجھے اس حرکت پہ بے حد خوشی ہوئی ہے کیونکہ بش اسی لائق تھا،
 
inamullah shah Posted on: Monday, December 15, 2008


-خالد، لاہور، کوئی بات نہیں کہ بال مس ہوگئی لیکن جوتا کا پہنچنا بھی کافی ہے ساری دنیا نے دیکھ لیا،آئندہ اس طرح کا چانس مس نہیں ہوگا۔
 
khalid Posted on: Monday, December 15, 2008
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | Next
Page 7 of 11


لفظوں کے انتخاب نے رسوا کیا تجھے
میرا کی ہی سن لیں!
مذاکرات کاموقع ضائع نہ کریں!
سول نافرمانی اور سوشل میڈیا
سول نافرمانی تحریک!!!
 
واقعی کچھ ہونے والا ہے۔۔۔۔؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 35 )
شاباش! سعیدہ وارثی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 31 )
سول نافرمانی تحریک!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 27 )
وزیراعظم عمران خان یا طاہرالقادری؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 26 )
لفظوں کے انتخاب نے رسوا کیا تجھے
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 20 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy