لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت Share
  Posted On Monday, July 02, 2012
  ……سید شہزاد عالم……
پنجاب میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کے دوران جاں بحق ہونے والے کس کے ہاتھوں پر اپنا لہو تلاش کریں۔ ہڑتال کیا ہے انسانیت کا جنازہ ہے ۔ زیر علاج معصوم بچے کی ڈرپ کھینچ لینا اور ماں باپ کی چیخ و پکار کو نظر انداز کر کے ہڑتال پر چلے جانا دل سوز واقعہ ہے جو مسیحائی جیسے مقدس پیشے کے منہ پر ایک طمانچہ سے کم نہیں۔ مطالبات منوانے کے لئے ہڑتال پر جانا ایک انتظامی معاملہ ہے اور مریضوں کے علاج سے انکار ایک غیر انسانی فعل ہے جس کی توقع ایک ڈاکٹر سے ہرگز نہیں کی جاسکتی۔ ڈاکٹری جیسے مقدس پیشے سے وابستہ افراد مطالبات منوانے کے لئے دیگر راستے بھی ڈھونڈ سکتے ہیں، اور اگر وہ اپنے موقف کو درست اور بر حق جانتے ہیں تو عدالت کے دروازے پر بھی دستک دے سکتے ہیں لیکن مسلسل ہڑتال پر چلے جانا اور جاں بلب مریضوں کے علاج سے انکار بہرحال ایک کریہہ جرم ہے جس کی ایک انسان دوسرے انسان سے توقع نہیں کر سکتا۔ حکومت کا غیر لچکدار رویہ اور سرد مہری بھی اپنی جگہ قابل مذمت ہے ۔ معاملات کو بگاڑنے سے بہتر ہے کہ اعلی سطح پر اس معاملے کو دیکھا جائے اور قابل قبول حل نکالا جائے۔ آئے دن ڈاکٹروں کی ہڑتال چاہے ان کے مطالبات بادی النظر میں جائز ہوں لیکن ہڑتال پر چلے جانا ہرگز قابل قبول صورتحال نہیں ہے۔ اس سے قبل یہ روش دیگر صوبوں میں بھی پھیلے حکومت کو موثر ایکشن لینا چاہئے، ڈاکٹروں کے جائز مطالبات مان کر ہڑتال کے خاتمے کی صورت نکالی جائے اور معصوم عوام کو اس کرب اور اذیت ناک صورتحال سے نجات دلائی جائے۔ پاک فوج سے ڈاکٹروں کی خدمات حاصل کرنا ایک عارضی حل ہے۔ صورتحال کو مزید بگڑنے سے بچایا جائے اور آئندہ کے لئے ایسی صورتحال کی بیخ کنی کی جائے۔
shahzad.janggroup@gmail.com
 
تبصرہ کریں     ا حباب کو بھیجئے  | تبصرے  (51)     

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard

Umer Malik, Abbottabad............Hartal Par janay Walay Tamam Doctors Ki Degrees Cancel Karni Chahye aur In par Practice Na Karnay Ki ta Hayat Pabandi Lagani hahye
 
Umer Malik Posted on: Monday, July 30, 2012

Tariq Hussain, Karachi..........Yeh Doctor nahin balkeh mafia hain.Punjab hukoomat ko iss se bhe sakhat iqdamat karne chahiyen.
 
Tariq Huyssain Posted on: Sunday, July 29, 2012

Ch. Rashid Ali Zafar , London...........dekhain g doctors k muqadas paishay ki qadar karni chahyiay aor her surat jald az jald un k jaiz mutalibaat ka fori hal nikalna chahiay aor doctors ko apni muqadas duty say kisi surat peechay nai hatna chahiay.
 
Ch Rashid Ali Zafar Posted on: Saturday, July 28, 2012

ریاض احمد، سعودی عرب…سب ڈاکٹر اپنی فیس کم کریں تاکہ پتہ چلے کہ عوام کے خیر خواہ ہیں ورنہ یہ لگے گا کہ یہ قصاب ہیں جس طرح زرداری حکومت لوٹ رہی ہے، اسی طرح یہ ڈاکٹر لوٹ رہے ہیں۔
 
riaz ahmed Posted on: Sunday, July 15, 2012

Jugno Khan, Saudi Arabia............arz hai...ke jo Doctors tabqee na kia aus pe hum ko bohut afsooos hai.wahe baat ate ha ke qanoon nahi hai.kis sa gela kis sa shekwaaa...jab aik country ke Doctors he ayese ha...en koo pansi pe chara de..kal koi aur doctor ayesa na kareinnn...es sa raste ma bete lotere badmash ache ha...gareebo ko to nahi chertey.
 
Jugno.Khan Posted on: Monday, July 09, 2012

Mumtaz Hafz, Jhelum............meray nazdek as ka hal y hy ky hospital praevet kr dey jaen.grebon ko cards ky zariye sahulat di jay.
 
mumutaz hafz Posted on: Monday, July 09, 2012

Shahzad Masood, UK..........yeh to lamha e fikariya hai jin se hum yeh umeed kartay hain k wo humaray dard pe marham lagain gay wahi aaj dard ki waja banay huey hain. yeh tareeqa koi b civilised insan nahi apna sakta hai mgr aj kal to aik hi saff main kharay ho gay mehmood o ayaz.
 
Shahzad Masood Posted on: Monday, July 09, 2012

محمداشفاق کمبوہ ,فیصل آباد........... اسلام علیکم ھم پاکستانی لوگ پیسہ اکھٹا کرنے کے چکر میں اتنے اندھے ھو چکے ھیں کہ ھمیں جائز اور ناجائز میں تمیز ھی نھی رھی۔ ڈاکٹری ایک مقدس پیشہ ھے لیکن بدقسمتی سے اس پیشہ سے وابسطہ لوگ زیادہ پیسہ کمانے کے لالچ میں نمبر ون ھیں۔
 
محمداشفاق کمبوہ Posted on: Monday, July 09, 2012

عمر بلتی، سعودی عرب…یہ ڈاکٹرز نہیں، جب ان کو میڈیکل کالجز میں داخلہ لینا ہوتا ہے تو اس وقت بڑے فخر سے انٹرویو دیتے ہوئے ملک و قوم کی خدمت کا جذبہ رکھنے کا دعویٰ کرتے ہیں، کہاں گئے وہ وعدے یا دعوے؟؟؟ انسانیت کی خدمت کے بجائے قوم کے خون کے پیاسے بن گئے ہیں، ملک میں کسی کی اتنی تنخواہ نہیں جتنی ایک معمولی ڈاکٹر کی تنخواہ ہے، اچھا بہت اچھا کیا پنجاب حکومت نے، ان کے ساتھ وہ کرنا چاہئے تھا کہ ان کو ہٹلر یاد آجاتا۔
 
عمر بلتی Posted on: Monday, July 09, 2012

Nauman Ahmed Khan, Layyah...........doctors ko ju agrrement dia jata heai wo us say agree hotay heain tu job par atay heain aur jub job mil jaty heain tu yeah dramay shuru kar datay heain inheain khuda ka khoof karain aur logo par rehim karain takay Allah tallah un par bhi rehim karay.aur agar real koi masla heai tu hamary govt meain key resposibilities heain unheain hal karay.
 
nauman ahmed khan Posted on: Sunday, July 08, 2012

Rao Niaz, New York............Gilani siasi sheheed nahi balkay siasi lash hain. PPP ko koi faida nahi hoga..
 
Rao Niaz Posted on: Sunday, July 08, 2012

Sanwal Gujjar, Shkargarh...........Hamare doctor buhat he galt kr rhe he pakistan army ke doctors ne hospitol me a kr buhat acha kam kea he hamare to yahe dua he k pakistan army tamam pepartmint ko sanbal le agr aesa ho jae to buhat he bihtar ho ga.
 
SANWAL GUJJAR Posted on: Friday, July 06, 2012

Umer, Sialkot............masiha qatil hain, in ko na-ehal kar dia jae. aur supreme cort main case kia jae, shahbaz sharif bohat acha kar rahe hain.
 
umer Posted on: Friday, July 06, 2012

محمد ثاقب، راولپنڈی…میں انقلاب پٹیل کی رائے سے اتفاق کرتا ہوں، ڈاکٹر کو ایسا طرزعمل اختیار نہیں کرنا چاہئے، جبکہ ان کی تنخواہیں دیگر سرکاری ملازمین سے زیادہ ہیں۔
 
Muhammad Saqib Posted on: Thursday, July 05, 2012

Mukhlis Rahi, Karachi............Hartali doctor ka masla hal karnay say pehlay. Yeh bay-niqab kia jae keh en kay pechay kon sa khufya hath hai.
 
Mukhlis Rahi Posted on: Thursday, July 05, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | Next
Page 1 of 4


گورا رنگ ہی کیوں؟
ورلڈ پولیو ڈے
اردوزبان کانفاذ:اہم قومی،آئینی ضرورت
’گو بابا گو‘ سے ’گو وٹو گو‘ تک!!
اب مستحکم فیصلے ہی پاکستانی کرکٹ کو بچاسکتے ہیں
 
قربانی سے پہلے قربانی۔۔۔۔فلم فلاپ!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 33 )
ملالہ کیلئے نوبل انعام اور سوشل میڈیا
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 11 )
بے ترتیبی ہی اب ترتیب ہوئی جاتی ہے
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 7 )
صوبائی اسمبلیوں کی پہلے سال کی کارکردگی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
اردوزبان کانفاذ:اہم قومی،آئینی ضرورت
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy