لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


نیٹو سپلائی بحالی ۔ آخر معمہ کیا ہے؟ Share
  Posted On Tuesday, May 22, 2012
  ……سید شہزاد عالم……
شکاگو میں نیٹو کانفرنس کے اعلامیہ کے مطابق نیٹوممالک 2013میں افغانستان کی سیکیورٹی مقامی فورسزکے سپردکرنے پررضامندہو گئے جبکہ پاکستان سے سپلائی روٹ جلدازجلدبحال کرنیکامطالبہ کیا گیا ہے۔ پاکستان سلالہ چیک پوسٹ پر نیٹو فورسز کے حملے اور اس کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصانات پر معافی اور معاوضہ کے مطالبے پر قائم ہے جبکہ امریکہ اس سے انکاری ہے، جس کے نتیجے میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں سرد مہری آ گئی ہے۔ پاکستان کی جانب سے تاحال نیٹو سپلائی کا راستہ بند ہے۔
یہ بات صاف عیاں ہے کہ پاکستان کی سیاسی قیادت سپلائی روٹ کھولنے کے حق میں ہے اور اس کی بندش سے پیدا ہونے والے مضمرات سے پوری طرح آگاہ ہے جبکہ پاکستان کے دوست ممالک بھی پاکستان کو یہی مشورہ دے رہے ہیں کہ وقت ضائع کئے بغیر اس سپلائی کو بحال کر دیا جائے اور اپنی معاشی اور اقتصادی صورتحال کو بہتر کرنے پر توجہ دی جائے لیکن اب تک تو یہی نظر آتا ہے کہ حکومت اور اپوزیشن جماعتیں اس اہم ترین معاملے پر باہمی تقسیم کا شکار ہیں اور سیاسی پوائنٹ اسکورنگ پر ان کا زور زیادہ ہے۔ عسکری حلقے بھی ان تمام مضمرات سے بخوبی آگاہ دکھائی دیتے ہیں تاہم جیسا کہ پہلے عرض کیا کہ معافی کا معاملہ ہی بظاہر رکاوٹ بن رہا ہے۔ اگر یہ اور دیگر معاملاتبخوبی حل نہیں ہو پاتے تو پاکستان کے لئے کئی خطرات منہ کھولے کھڑے ہیں مثلاً
۱۔ دہشت گردوں کا پیچھا کرنے کے بہانے سلالہ پوسٹ جیسے واقعات دہرائے جاسکتے ہیں، اور الٹا الزام بھی پاکستانی فورسز پر عائد کیا جائے گا۔
۲۔ پاکستانی فورسز پر بلوچستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے الزمات عائد کرکے بھرپور مہم چلائی جا سکتی ہے۔ جس کے لئے امریکہ میں ہوم ورک تیار ہے۔
۴۔ معاشی طور پر پاکستان کو جھکانے کے لئے بین الاقوامی پابندیاں بھی عائد کی جاسکتی ہیں۔
۵۔ حافظ سعید اور ممبئی واقعات کا بہانہبنا کر پاکستان کی مشرقی سرحدوں پر خطرات بڑھائے جا سکتے ہیں۔
دنیا ہمارے بارے میں کیا اور کیسا سوچ رہی ہے؟۔۔۔ کیا ہمارے قائدین ان تمام خطرات سے بے نیاز ہو کر اپنی موج مستی میں گم ہیں؟۔۔۔۔ عوام کو ان خطرات سے کیوں آگاہ نہیں کیا جارہا ہے؟۔۔۔ ہم بحیثیت قوم کیوں ان خطرات کے خلاف متحد نہیں ہو پارہے ہیں؟۔۔۔۔ نیٹو سپلائی بحال کی جائے یا نہ کی جائے ۔۔۔۔۔آپ بھی اس اہم ترین معاملے میں تبصرہ کر کے بحث میں شامل ہو سکتے ہیں۔
 
تبصرہ کریں     ا حباب کو بھیجئے  | تبصرے  (165)     

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard

Altaf, Saudi Arabia.........pakistan ko supply khol dayni chaheyay, wo is k wajah se pehlay hi bohat moshkilat main ha.
 
altaf Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Saeed Ahmad, Burewala......... Nato suply kisi sourt be nahi kholni chahiyay. America to pehlay he Pakistan ka dushman he. Uss nay kabi bi Pakistan ka faida nahi socha.Uss ko apna mafad aziz he.
 
Saeed Ahmad Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Asif Mahmood, Saudi Arabia..........Akhir hum kab tak Yunhi america se dartay rahein gey k agr hum nain yeh na kiy or woh na kiya to woh hamain mar de ga ya hum bhookay mer jayen gey. Aakher hum bhi aik ghairat-mand nation hain aur humain bhi jeeny ka haq hona chaye. meray khayal mein nato supply bahaal nahein honi chahiyay.
 
Asif Mahmood Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Ali, Karachi........NATO Supply Nahi Kholna Chahieay chahy kuch bhi ho.
 
ali Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Mukhlis Rahi, Karachi.........Ham ghulamana zahenyet kay alambardaar. kuch bhi nahi kar saktay.
 
Mukhlis Rahi Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Qaisar Iqbal Sandhu, Mandi Bahauddin..........Ham ko apnay economic halat dekhtay howay zayada tax laga kar saplay roots khol dene chahiyay.
 
Qaisar Iqbal Sandhu Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Farhan Gilani, Karachi..........nato supplies sirf or sirf budget 2012-13 kee waja say ruka huwa hay. mujuda hukumat apnay 5 budget daykar record banana chahti hay , is kay bad ye hukumat khud he billa muawafza supply line khol day ge.
 
farhan gilani Posted on: Wednesday, May 23, 2012

آصف لطیف، کراچی…بین الاقوامی سطح پر ممالک اپنے قومی مفادات کو مد نظر رکھ کر سفارتی، عسکری اور معاشی تعلقات استوار کرتے ہیں ہماری بد قسمتی ہے کے روز اول سے ہی ہماری خارجہ پالیسی کا محور امریکی سامراج کی چاکری رہا ہے اور صورتحال یہ ہے کے اب بھی ہمارے اداروں سے کوئی دوراندیشی اور دیرپا حل کی سوچ نظر نہیں آ رہی،دنیا سے الگ تھلگ ہو کر نہیں رہا جا سکتا لیکن ہمارا المیہ یہ رہا کے ہم نے اڑوس پڑوس میں ہمیشہ دشمنی پالے رکھی اور سات سمندر پار امریکا سے یاری لگائے رکھی یہ سب اسی کا نتیجہ ہے،اگر حکومت اس میں سنجیدہ ہے تو نیٹو سپلائی کو بحال کرے لیکن اس طرح کہ ریجنل طاقتوں کو اعتماد میں لے اور ان سے سماجی، معاشی، عسکری تعلقات استوار کرے، اور بین الاقوامی سطح پر اپنا ایک سفارتی وزن لے کر آئے۔۔۔ اور اپنی خارجہ پالسی کے اندر دور رس تبدیلیاں لے کر آئے، اچانک یو ٹرن قوم کے لیے نقصان دے ہو گا۔۔ لیکن ہمارے اداورں کے رویوں سے ایسا لگ نہیں رہا کے وہ امریکی چاکری سے نکلنا چاہتے ہوں۔
 
آصف لطیف Posted on: Wednesday, May 23, 2012

ALI ASGHAR, MULTAN........PAKISTAN KO NETO SUPPLY BAND RAKHNI CHAHYA,KUNKA EZAT AURE ZILAT MERAY ALLAH PAK K HATHA MAIN HAI AMERACIA K HATH MAIN NAHI HAI.
 
ALI ASGHAR Posted on: Wednesday, May 23, 2012

خالد، کراچی…امریکا کے معافی مانگنے تک نیٹو سپلائی بحال نہیں ہونی چاہئے۔
 
Khalid Posted on: Wednesday, May 23, 2012

خادم حسین، رحیم یار خان…پتہ نہیں کیسے لوگ ہیں جنہیں کسی چیز کی پروا نہیں ہے اور نہ معا ملات کی سنگینی کا احساس ہے، ایک دوڑ ہے جس کی ان لو گوں کو ضرورت نہیں ہے کیو نکہ دولت ان لو گوں کے پاس وافر ہے لیکن پھر بھی یہ اس کے لئے کیا کیا کچھ نہیں کر رہے۔
 
khadim hussain Posted on: Wednesday, May 23, 2012

نجم الدین، کراچی…جناب شھزاد صاحب آپکا کالم پڑھا پڑھ کر بڑي مايوسي ھوتي آپ جيسا قابل آدمي بھي امريکا سے ڈرانے کي کوشش کررھاھے آپکو معصوم لوگوں کي ڈرون حملوں ميں شھادت نظر نھيں آتي بغير ثبوت کے کوئ شخص مجرم نھيںھو سکتا اگر آپ صرف معاشي خوشحالي ھي چاھتے ھيں تو اس کے لئے آپ کو نيک اور خوف خدا رکھنے والي قيادت چائے ورنھ آج آپ اپنے بھائيوں کو بيچنے کا مشورھ دے رھے ھيں کل يھ آپ کو بھي بيچ دينگے اور آپ کو پتھ بھي نھيں چلے گے-
 
najum uddin Posted on: Wednesday, May 23, 2012

مقصود، کرک…نیٹو سپلائی ہمیشہ کیلئے بند کردینی چاہئے۔
 
Maqsood Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Muhammad Amin, Chanam Kallarsydan.........hmara hukmaran amarca kay aagay bik chukay hain aur pakistan ko bachna ka chakar main hain. main awam sa appeal karta hoo k road pe aakar awami takat ka zariey in hukumraano ko nikaal baahar karein.
 
muhammad amin Posted on: Wednesday, May 23, 2012

Nadeem, Islamabad........pakistan ko kisi be surat main nato supply bahal nay karni chahya ur na amreci dubao main ana chahya maghar ya sab kuch aik gaharat-mund leadership he kar sakati hay jiss ki hamaray haan kami hay.
 
nadeem Posted on: Wednesday, May 23, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | Next
Page 8 of 11


لفظوں کے انتخاب نے رسوا کیا تجھے
میرا کی ہی سن لیں!
مذاکرات کاموقع ضائع نہ کریں!
سول نافرمانی اور سوشل میڈیا
سول نافرمانی تحریک!!!
 
واقعی کچھ ہونے والا ہے۔۔۔۔؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 35 )
شاباش! سعیدہ وارثی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 31 )
سول نافرمانی تحریک!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 27 )
وزیراعظم عمران خان یا طاہرالقادری؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 26 )
مذاکرات کاموقع ضائع نہ کریں!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 19 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy