لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


نیٹو سپلائی بحالی ۔ آخر معمہ کیا ہے؟ Share
  Posted On Tuesday, May 22, 2012
  ……سید شہزاد عالم……
شکاگو میں نیٹو کانفرنس کے اعلامیہ کے مطابق نیٹوممالک 2013میں افغانستان کی سیکیورٹی مقامی فورسزکے سپردکرنے پررضامندہو گئے جبکہ پاکستان سے سپلائی روٹ جلدازجلدبحال کرنیکامطالبہ کیا گیا ہے۔ پاکستان سلالہ چیک پوسٹ پر نیٹو فورسز کے حملے اور اس کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصانات پر معافی اور معاوضہ کے مطالبے پر قائم ہے جبکہ امریکہ اس سے انکاری ہے، جس کے نتیجے میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں سرد مہری آ گئی ہے۔ پاکستان کی جانب سے تاحال نیٹو سپلائی کا راستہ بند ہے۔
یہ بات صاف عیاں ہے کہ پاکستان کی سیاسی قیادت سپلائی روٹ کھولنے کے حق میں ہے اور اس کی بندش سے پیدا ہونے والے مضمرات سے پوری طرح آگاہ ہے جبکہ پاکستان کے دوست ممالک بھی پاکستان کو یہی مشورہ دے رہے ہیں کہ وقت ضائع کئے بغیر اس سپلائی کو بحال کر دیا جائے اور اپنی معاشی اور اقتصادی صورتحال کو بہتر کرنے پر توجہ دی جائے لیکن اب تک تو یہی نظر آتا ہے کہ حکومت اور اپوزیشن جماعتیں اس اہم ترین معاملے پر باہمی تقسیم کا شکار ہیں اور سیاسی پوائنٹ اسکورنگ پر ان کا زور زیادہ ہے۔ عسکری حلقے بھی ان تمام مضمرات سے بخوبی آگاہ دکھائی دیتے ہیں تاہم جیسا کہ پہلے عرض کیا کہ معافی کا معاملہ ہی بظاہر رکاوٹ بن رہا ہے۔ اگر یہ اور دیگر معاملاتبخوبی حل نہیں ہو پاتے تو پاکستان کے لئے کئی خطرات منہ کھولے کھڑے ہیں مثلاً
۱۔ دہشت گردوں کا پیچھا کرنے کے بہانے سلالہ پوسٹ جیسے واقعات دہرائے جاسکتے ہیں، اور الٹا الزام بھی پاکستانی فورسز پر عائد کیا جائے گا۔
۲۔ پاکستانی فورسز پر بلوچستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے الزمات عائد کرکے بھرپور مہم چلائی جا سکتی ہے۔ جس کے لئے امریکہ میں ہوم ورک تیار ہے۔
۴۔ معاشی طور پر پاکستان کو جھکانے کے لئے بین الاقوامی پابندیاں بھی عائد کی جاسکتی ہیں۔
۵۔ حافظ سعید اور ممبئی واقعات کا بہانہبنا کر پاکستان کی مشرقی سرحدوں پر خطرات بڑھائے جا سکتے ہیں۔
دنیا ہمارے بارے میں کیا اور کیسا سوچ رہی ہے؟۔۔۔ کیا ہمارے قائدین ان تمام خطرات سے بے نیاز ہو کر اپنی موج مستی میں گم ہیں؟۔۔۔۔ عوام کو ان خطرات سے کیوں آگاہ نہیں کیا جارہا ہے؟۔۔۔ ہم بحیثیت قوم کیوں ان خطرات کے خلاف متحد نہیں ہو پارہے ہیں؟۔۔۔۔ نیٹو سپلائی بحال کی جائے یا نہ کی جائے ۔۔۔۔۔آپ بھی اس اہم ترین معاملے میں تبصرہ کر کے بحث میں شامل ہو سکتے ہیں۔
 
تبصرہ کریں     ا حباب کو بھیجئے  | تبصرے  (165)     

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard

Shahid, Dubai..........Pakistan ko kuchh nahein hoga, Allah hamarey hukmrano ko hidaayat de.
 
Shahid Posted on: Thursday, May 24, 2012

محمد ندیم، ساہیوال…شہزاد عالم صاحب، جن آپشنز کا آپ نے خدشہ ظاہر کیا ہے، کیا گارنٹی ہے کہ نیٹو سپلائی کھولنے کے بعد امریکا یہ آپشنز استعمال نہیں کرے گا؟ اس نے دنیا میں واویلا مچایا ہوا ہے اور ہے بھی جھوٹا، ہم ہیں بھی مظلوم اور پھر بھی آپ کی ایسی باتیں سمجھ سے بالا تر ہیں۔
 
محمد ندیم Posted on: Thursday, May 24, 2012

Khalid, Dubai.........Assalam o alaikum. mai es moamele par ye bat karna chahta hoon, keh jab tak hum amreeka se beek mangte rahenge, tabtak hum ezzat nahi hasel karsakte. nato saply ko bahal nahi karna chahey. alhamdullah hamare mulk me kes cheez ki kami hai .
 
khalid Posted on: Thursday, May 24, 2012

Muhammad Rizwan, Faisalabad........Sher ki aik din ki zindgi gidar ki so sala zindgi say bahtar hay.
 
Muhammad Rizwan. Posted on: Thursday, May 24, 2012

Yar Muhammad, Dubai.........hamari foreign policy khoof k saye mein perwan charrhti hay aur abhi tak ye hota aya hay,izzat ki zindagi guzaro aur pakistan ko eik gairatmand mulk ka naam do. ye jo khatrat ki aap baat kertay hein agar dekha jae to hum 10 years pehlay mushraf ne bhi ye socha tha k hum pathron ke dor mein chalay jaeinge lekin kia huwa hum abhi tak udher hi hein america ka khatra abhi tak hay,faida kia huwa russia ki riyastein jinhon ne iss jang k liye airbase diye thay sab le liye turkamanistan ,kergastan aap ke samna hein kia huwa.
 
yar muhammad Posted on: Thursday, May 24, 2012

Sajid, Saudi Arabia.........hamain Allah say Darna Chahyay na k america se. Rizk Allah daiga. Pakistan nay 9/11 baad apnay bhaion kay khilaf jang main usa ka saath day kar ghaltee kee thee. us kay bawajood amreeka nay ham par darone hamlay kia, raymod davis kee tarah kay hazaroon log yahaan aagaey aor har takhreeb karee un ka hee karnama lag raha hay kuch direct kuch indirect .hamaree mushkilat donon soorton main hain phir kion na sahee ghairat wala faisla 11 saal baad kar he lia hay to ab dat jana chahyay .allah say madad mangnee chahyay concept theek hona chahy Allah sab say taqatwar aor sab say ziada raham karnay wala hay. maangna hay to uss say maango uss sey ziada koi raham naheen kar sakta aor uss sey ziada koi azab bhee naheen dey sakta. amreeka kay azab sey na daro, Allah kay azab sey daro. HAQ PAR DAT JAIO, inshAllah amreka ghutnay taik daiga.
 
sajid Posted on: Thursday, May 24, 2012

راشد چوہدری، امریکا…دنیا کی بیشتر اقوام اپنے ارد گرد وقوع پذیر ہونے والی تبدیلیوں سے مستتفید ہونے کی کوشش کرتی ہیں، مگر ہمارے نااہل حکمران ہمیشہ ملکی مفادات کو داوٴ پر لگا کے ذاتی مفاد حاصل کرنے کی سعی میں لگے رہتے ہیں۔ جنرل مشرف نے اپنی بندوق کے زور پر حاصل کردہ حکومت کو طول دینے کے لئے امریکی شرائط پر دشت گردی کے خلاف جنگ میں شمولیت اختیار کی تھی اور اس کے امریکی دوستوں نے اس کمزوری سے بھرپور فائدہ اٹھایا اور آخر میں اسے چلتا کیا۔ پاکستان کی نئی حکومت میں بھی اتنا دم خم نہیں تھا کہ کوئی موٴثر اقدام کرتی۔ معاملہ جوں کا توں چلتا رہا۔ امریکہ دنیا کی واحد سپرپاور ہے۔ اس کے ساتھ معاملات طے کرنے کے لئے بڑی حکمت عملی کی ضرورت ہے، جس کا ہمارے ہاں فقدان ہے، ایسے پیچیدہ مسائل کے لئے بڑے لیڈروں کی ضرورت ہوتی ہے، لیکن ایسے لیڈروں کو تو ہم تختہ دار پر لٹکا دیتے ہیں، اب مکافات عمل سے تو گذرنا ہی ہوگا۔
 
Rashid Chaudhry Posted on: Thursday, May 24, 2012

Muhammad Akram, Lahore...........nato supply nai open honi chaiay kio k agar USA k liay ya bohat aham hota to ab tak mafi mang kar apna kam chla lata lakin us ka asal maqsad pakistan ko torna ha is liay wo is mamlay ko hawa day raha ha wahid aik hal ha k ham imdad sey inkaar kar dain to sab theek ho jay ga
 
muhammad akram Posted on: Thursday, May 24, 2012

Faisal, Dubai.........sab nato supply bhal nahi honi chahiyay. hamara kuch sahafi or siasatdan ham logon ko dara raha hain ka agar amarca ka sath na dia tu ham kise kam ka nahi raha ga . lakin 12 sal sath da kar bhe ap na kia hasil kia ha.
 
faisal Posted on: Thursday, May 24, 2012

حسن، کراچی…نیٹو سپلائی بحال کرنے کی کوئی ضرورت نہیں-
 
hasan Posted on: Thursday, May 24, 2012

عبدالرحمان، لاہور…آپ کی سوچ غلط ہے۔
 
abdul rhman Posted on: Thursday, May 24, 2012

Ali Noman, Lahore........jb tak hamain khud-dar or batil k agay dat janay walay hukmran nahe mil jatay is qoam ko issi tarha becha jata rhay ga.
 
ali noaman Posted on: Thursday, May 24, 2012

حلیمہ شاہ، لاہور…آپ سب نیٹو سپلائی کی بحالی کو بہتر سمجھتے ہیں جبکہ آپ کے ملک کے ساتھ امریکہ نے کیا کیا یہ یاد نہیں۔ اب تک جتنے بھی خودکش حملے، بم دھماکے، ڈرون حملے، سلالہ کا واقعہ، بلوچستان کے حالات، یہ سب امریکہ تو کروا رہا ہے۔ آپ سب سے ایک سوال ہے کہ ”کیا ہم امریکہ کے بغیر رہ نہیں سکتے؟ فارگٹ اباوٴٹ امریکہ، جن سے ہمارے بہتر تعلقات چل رہے ہیں۔ ہم اگر آج امریکہ سے اپنا ناتا رشتہ توڑ دیں۔ نہیں چاہئے ہمیں ڈالرز، تو پھر دیکھیں کہ کس طرح ہمارا ملک مہینوں میں ٹھیک ہوسکتا ہے۔ عجیب لوگ ہو تم، ریمنڈ ڈیوس بھول گئے، بلیک واٹر بھول گئے، اور امریکہ کی وکالت کرتے جا رہے ہو کرتے جا رہے ہو۔ مرنے دو نیٹو فورسز کو افغانستان میں، یقیناً ہمارے بغیر وہ واپس نہیں جاسکتے۔ اگر ہم ڈٹ گئے تو امریکہ کی ایک لاکھ پچاس ہزار فوج گیدڑوں کی طرح مر جائے گی۔ مرنے دو ہمیں کیا۔ آئے روز ہمارے ملک کے غریب شہری بھی تو ڈرونز اور دھماکوں کی وجہ سے مر رہے ہیں۔ توڑ دو امریکہ کے ساتھ رشتہ۔ ان کو کیا پتہ انسانی خون کی قیمت کا۔
 
حلیمہ شاہ Posted on: Thursday, May 24, 2012

شاہ زمان بابر، مردان…وزیر اعظم کو ہٹادیں سب ٹھیک ہوجائے گا۔
 
شاہ زمان بابر Posted on: Thursday, May 24, 2012

Ahmed Khan, Tandoadam.........Agr amrica ki Baat nahi Mani to phir Attack ka liye Taiyar rahna hoga Aur paksitan us ka muqabla nahi kar sakta ku ka jis nai research ki ,khoj lagaya aj wo super power ban gaya aur jinhao nai gor-o-fikar nahi ki wo es atmi power k ghulam ban gaye .
 
ahmed khan Posted on: Wednesday, May 23, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | Next
Page 7 of 11


رمضان المبارک اور افطار پارٹیاں
سیاپا 4حلقوں کا
پولیو کی روک تھام کیسے؟
رمضان المبارک اور شمالی وزیرستان کے آئی ڈی پیز
انسداد منشیات کا عالمی دن
 
سیاپا 4حلقوں کا
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 14 )
رمضان المبارک اور شمالی وزیرستان کے آئی ڈی پیز
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 3 )
پولیو کی روک تھام کیسے؟
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 1 )
انسداد منشیات کا عالمی دن
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 1 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy