لاگ ان
Login
 ای میل
پاس ورڈ
 
Disclamier


نیٹو سپلائی بحالی ۔ آخر معمہ کیا ہے؟ Share
  Posted On Tuesday, May 22, 2012
  ……سید شہزاد عالم……
شکاگو میں نیٹو کانفرنس کے اعلامیہ کے مطابق نیٹوممالک 2013میں افغانستان کی سیکیورٹی مقامی فورسزکے سپردکرنے پررضامندہو گئے جبکہ پاکستان سے سپلائی روٹ جلدازجلدبحال کرنیکامطالبہ کیا گیا ہے۔ پاکستان سلالہ چیک پوسٹ پر نیٹو فورسز کے حملے اور اس کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصانات پر معافی اور معاوضہ کے مطالبے پر قائم ہے جبکہ امریکہ اس سے انکاری ہے، جس کے نتیجے میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں سرد مہری آ گئی ہے۔ پاکستان کی جانب سے تاحال نیٹو سپلائی کا راستہ بند ہے۔
یہ بات صاف عیاں ہے کہ پاکستان کی سیاسی قیادت سپلائی روٹ کھولنے کے حق میں ہے اور اس کی بندش سے پیدا ہونے والے مضمرات سے پوری طرح آگاہ ہے جبکہ پاکستان کے دوست ممالک بھی پاکستان کو یہی مشورہ دے رہے ہیں کہ وقت ضائع کئے بغیر اس سپلائی کو بحال کر دیا جائے اور اپنی معاشی اور اقتصادی صورتحال کو بہتر کرنے پر توجہ دی جائے لیکن اب تک تو یہی نظر آتا ہے کہ حکومت اور اپوزیشن جماعتیں اس اہم ترین معاملے پر باہمی تقسیم کا شکار ہیں اور سیاسی پوائنٹ اسکورنگ پر ان کا زور زیادہ ہے۔ عسکری حلقے بھی ان تمام مضمرات سے بخوبی آگاہ دکھائی دیتے ہیں تاہم جیسا کہ پہلے عرض کیا کہ معافی کا معاملہ ہی بظاہر رکاوٹ بن رہا ہے۔ اگر یہ اور دیگر معاملاتبخوبی حل نہیں ہو پاتے تو پاکستان کے لئے کئی خطرات منہ کھولے کھڑے ہیں مثلاً
۱۔ دہشت گردوں کا پیچھا کرنے کے بہانے سلالہ پوسٹ جیسے واقعات دہرائے جاسکتے ہیں، اور الٹا الزام بھی پاکستانی فورسز پر عائد کیا جائے گا۔
۲۔ پاکستانی فورسز پر بلوچستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے الزمات عائد کرکے بھرپور مہم چلائی جا سکتی ہے۔ جس کے لئے امریکہ میں ہوم ورک تیار ہے۔
۴۔ معاشی طور پر پاکستان کو جھکانے کے لئے بین الاقوامی پابندیاں بھی عائد کی جاسکتی ہیں۔
۵۔ حافظ سعید اور ممبئی واقعات کا بہانہبنا کر پاکستان کی مشرقی سرحدوں پر خطرات بڑھائے جا سکتے ہیں۔
دنیا ہمارے بارے میں کیا اور کیسا سوچ رہی ہے؟۔۔۔ کیا ہمارے قائدین ان تمام خطرات سے بے نیاز ہو کر اپنی موج مستی میں گم ہیں؟۔۔۔۔ عوام کو ان خطرات سے کیوں آگاہ نہیں کیا جارہا ہے؟۔۔۔ ہم بحیثیت قوم کیوں ان خطرات کے خلاف متحد نہیں ہو پارہے ہیں؟۔۔۔۔ نیٹو سپلائی بحال کی جائے یا نہ کی جائے ۔۔۔۔۔آپ بھی اس اہم ترین معاملے میں تبصرہ کر کے بحث میں شامل ہو سکتے ہیں۔
 
تبصرہ کریں     ا حباب کو بھیجئے  | تبصرے  (165)     

   تبصرہ کریں  
  آپ کا نام
  ای میل ایڈریس
شھر کا نام
ملک
  تبصرہ
کوڈ ڈالیں 
  Urdu Keyboard

Muhammad Tariq, Dubai............Hamain Nato Supply bahal nahi karni chahia kyn ka abi salala check post per attack kia hi kal atomic sites per be kar sakta hi islia pakistan ko Nato supply bahal nahi karni wasa be America ka sath de kar dekh lia hi or pakistan ka kia halt hain sab logon ko maloom hai.
 
Muhammad Tariq Posted on: Tuesday, June 12, 2012

MOHAMMAD IMRAN, KARACHI.............HAMIN BILKUL NAHI KHOLNI CHAHIYE KISI KO TU STAND LENA PARAY GA AMERICA K AAGEY K HUM BHI KUCH PAKISTANI QUM KOI KEERAY MAKORAY NAHI HAIN K JAB CHAHA JAHAN CHAHA MAAR DIYA KABHI NAHI KHULNI CHAYE.
 
MOHAMMAD IMRAN Posted on: Tuesday, June 12, 2012

IQBAL AHMED, SHARJAH..............SHER KI 1 DIN KI ZINDAGI GEEDAR KI 100 SAAL KI ZINDAGI SE BEHTAR HAI.
 
IQBAL AHMAD Posted on: Tuesday, June 12, 2012

Waseem, Multan.............Nato supply bahal nahi krni chaihy kia kry ga amrica kuch nahi kr skta wo hmara, ALLAH hamare sath hay sher ki 1 din ki zindgi geedar ki 100 sal ki zindgi say behter hy.
 
Waseem Posted on: Tuesday, June 12, 2012

Ahsan Saghir, Iran.............humain ye dekhna chahiye k nato supply se nuqsaan kis ka ho rha hai bad mai apna faida talash kia jaye agr tu ye muslim bhai k nuqsaan mai hai to islam humy iss ki ijazat ni deta.
 
Ahsan Saghir Posted on: Monday, June 11, 2012

Mohammad Iqbal, Dera Bugti.............nato supply bahal nahi hona chahiye q k yeh tamam pakistanion ki izzat ka sawal hai.
 
mohammad iqbal Posted on: Monday, June 11, 2012

Muhammad Ali, Rawalpindi.........Allah hai na? to phir dar q rahay ho? america nay pehlay konsa hamein chhora hai, jo ab qyamat aa jaey gi? buzdili ka sabaq qaum ko mat parhain..america naraz ho gya to mer nahi jaen ge. Allah pe bharpur bhrosa aor apnay wasail pe khud inhisari hi hamain bcha sakti hai.
 
Muhammad Ali Posted on: Monday, June 11, 2012

FARHAT ABBAS, LAHORE.........DUNYA MAIN GHAIRAT SE JEENA SEEKHO GHAIRATMAND AQWAM MASLAHATON KA SHIKAR NAHI HOTEIN.
 
farhat abbas Posted on: Monday, June 11, 2012

Mehmood Ahmed Raja, Islamabad...........ab wakt a gaya hai keh hamara har kam watan ke liye ho..
 
mehboob ahmad raja Posted on: Monday, June 11, 2012

محمد نعیم، سعودی عرب…نیٹو سپلائی کھولنے کی کوئی ضرورت نہیں، یہ وقت قوم کو متحد کرنے کا ہے، ہم امداد کے بغیر بھی زندہ رہ سکتے ہیں۔
 
Mohammad Naeem Posted on: Monday, June 11, 2012

عاطف راؤ، لندن…اگر امریکا شاہ رخ کے معاملے پر معافی مانگ سکتا ہے تو پاکستان سے کیوں نہیں؟ اس کی وجہ یہ ہے کہ اول پاکستان میں کمزور سیاسی قیادت اور ایبٹ آباد آپریشن کے دوران جوابی کارروائی نہ کرنا۔ جب امریکی ہیلی کاپٹر پاکستان کی حدود میں داخل ہوئے تھے اسی وقت انہیں گرادیا جاتا۔
 
Atif Rao Posted on: Monday, June 11, 2012

بابر عباس، کراچی…نیٹو سپلائی کھولنے کی کوئی ضرورت نہیں، موجودہ حکومت سے جلد از جلد نجات حاصل کی جائے۔
 
babar_abbas530@yahoo.com Posted on: Monday, June 11, 2012

Rehan Ali, Gujranwala.........ye baatien apni jaga magar hum kab tak dartey rahein gey, jis din hum ne stand khudi ka lay lia usi din sy kamyabi humarey qadm choomey gi. USA tu waisy hi apnay anjaam ki janab barh raha hai, bas humien dhakka lagany ki zaroorat hai.
 
rehan ali Posted on: Sunday, June 10, 2012

Sarfraz, Saudi Arab............hum nato suply kohlna ka haq ma nahi ha... USA ka pakistan ka sath itna mafdaat ha ka woh kabhi bhi pakistan per humla nahi kara ga.
 
sarfraz Posted on: Sunday, June 10, 2012

Badar Khosa , Karachi...........agar PM Gilani ko jald se jald nahi hataya gaya to mulk tabah ho jaaey ga....
 
Badar Khosa Posted on: Sunday, June 10, 2012
Prev | 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | Next
Page 2 of 11


اردو زبان کا نفاذ،ایک اہم قومی و آئینی ضرورت
’گو بابا گو‘ سے ’گو وٹو گو‘ تک!!
اب مستحکم فیصلے ہی پاکستانی کرکٹ کو بچاسکتے ہیں
ہاتھ دھونے کا عالمی دن
ملالہ کیلئے نوبل انعام اور سوشل میڈیا
 
قربانی سے پہلے قربانی۔۔۔۔فلم فلاپ!!!
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 33 )
ملالہ کیلئے نوبل انعام اور سوشل میڈیا
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 11 )
بے ترتیبی ہی اب ترتیب ہوئی جاتی ہے
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 7 )
صوبائی اسمبلیوں کی پہلے سال کی کارکردگی
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
اردو زبان کا نفاذ،ایک اہم قومی و آئینی ضرورت
تبصرہ کریں  تبصرے  ( 5 )
 
 
 
 
Disclamier
 
 
Disclamier
Jang Group of Newspapers
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this
web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited
Privacy Policy